حیدرآباد

عقیدہ ختم نبوت کی حفاظت کرنا روز محشر سرکار دو عالمﷺ کی شفاعت کا بہترین ذریعہ

مجلس تحفظ ختم نبوت ٹرسٹ کاماریڈی کے سالانہ اجلاس سے علماء کا خطاب، ٹرسٹیان مجلس کا اظہارِ تشکر، اور مزید تعاون کی اپیل

حیدرآباد (ہندوستان اردو ٹائمز) عقیدۂ ختم نبوت کی حفاظت کے سلسلے میں کچھ کام کرنا روز محشر سرکار دو عالمﷺ کی شفاعت کا بہترین ذریعہ ہے، اللہ سبحانہ و تعالیٰ کا شکر ادا کرتے ہیں کہ اللہ جل جلالہ عم نوالہ نے اپنے نبی حضرت محمد مصطفیٰﷺ کے تاجِ ختم نبوت کی حفاظت کے سلسلہ میں کچھ ٹوٹے پھوٹے انداز میں کام کرنے کی توفیق وسعادت عطا فرمائی، ان خیالات کا اظہار حافظ محمد فہیم الدین منیری ناظم مجلس تحفظ ختم نبوت کاماریڈی نے سالانہ معاونین کے اجلاس سے کرتے ہوئے کیا، اور سلسلۂ خطاب کو جاری رکھتے ہوئے کہا کہ عقیدۂ ختم نبوت کا تحفظ ہر مسلمان کی ذمہ داری، ایمان کا تقاضہ، حصول جنت کا سبب اور شفاعتِ رسولﷺ کا ذریعہ ہے، دین کی تکمیل کا مطلب یہ ہے کہ یہ دین اب قیامت تک باقی رہے گا، اب اس میں کوئی تبدیلی، کسی قسم کا اضافہ یا کسی ترمیم کی ہرگز گنجائش نہیں، لہٰذا جب دین مکمل ہوچکا ہے تو انبیاء کرام علیہم السلام کی بعثت کا مقصد بھی پورا ہوچکا، لہٰذا آنحضرتﷺ کے بعد اب نہ کسی نبی کی ضرورت ہے اور نہ کسی نبی کی گنجائش ہے، اسی لئے اللہ نے آپﷺ کی رسالت کے ساتھ ساتھ آپﷺ کی ختم نبوت کا بھی اعلان کردیا گیا اور نبوت و انبیاء کا جو سلسلہ حضرت آدم علیہ السلام سے شروع ہوا تھا، وہ سلسلہ آنحضرت ﷺ پر ختم کردیا گیا، حضرت محمد مصطفی، احمد مجتبیٰﷺ اللہ کے آخری نبی ہیں، آپﷺ کے بعد قیامت تک کوئی نبی نہیں آئے گا، آپ پر جو کتاب نازل ہوئی قرآن کریم وہ اللہ کی آخری کتاب ہے اس کے بعد کوئی کتاب نازل نہیں ہوگی اور آپ کی امت آخری امت ہے جس کے بعد کوئی امت نہیں، ناظم مجلس حافظ فہیم الدین منیری نے مجلس تحفظ ختم نبوت ایجوکیشنل اینڈ چیارٹیبل ٹرسٹ کی جانب سے کی جانے والی خدمات کا مختصر خاکہ اور معاونین کی جانب سے دی جانے والی امداد و تعاون کو کس طرح صرف کیا گیا، اسکی یکسالہ کارگزاری رپورٹ پیش کرتے ہوئے کہا کہ مجلس تحفظ ختم نبوت کا قیام مجاہدملت حضرت مولانا ابرار الحسن صاحب رحمانی قاسمی دامت برکاتہم کی مجاہدانہ صدارت میں 2000؁ء ایک مکتب کے ذریعے عمل میں آیا، آج الحمدللہ مجلس کے زیراہتمام ضلع کاماریڈی میدک وسرسلہ کے 15 منڈلوں کے 83 مقامات پر مکاتب کا قیام عمل میں آیا، جس میں 68 معلمین کرام 1193 نونہالانِ قوم و دخترانِ ملت کو عقائد صحیحہ کے ساتھ قرآن پاک کی تعلیم اور دینی اسلامی تربیت سے آراستہ کررہے ہیں، مکاتب کے معلمین کا ماہانہ وظیفہ منجانب مجلس 220000 (دو لاکھ بیس ہزار روپئے) سے متجاوز ہے، امسال اپریل 2020؁ء تا مارچ 2021؁ء سالانہ وظیفہ معلمین 2188747 اکیس لاکھ اٹھاسی ہزار سات سو سینتالیس روپئے دیا گیا، جبکہ کل آمدنی 1540322 (پندرہ لاکھ چالیس ہزار تین سو بائیس روپئے) امسال 648425 (چھ لاکھ اڑتالیس ہزار چار سو پچیس روپئے) ادا طلب قرض ہے معلمین کرام کے قیام انکی محنتوں کا نتیجہ ہیکہ مسجدیں اذان و نماز کے ذریعے آباد ہورہی ہیں، قادیانیت ودیگر باطل مشنریز اسلام کے چراغ کو روشن پاکر دم دباتے بھاگ چکے ہیں، الحمد للہ، نیز ایسے کئی مقامات جہاں مساجد نہیں تھے، جبکہ برسوں سے مسلمان آباد تھے، وہاں الحمداللہ مساجد کی تعمیر عمل میں آچکی ہے، وقتاً فوقتاً اسلامی ماحول و معاشرہ کو بنانے کے لئے جلسہائے ختم نبوت کا انعقاد عمل میں لایا جاتا ہے، متعلقہ مکاتب و معلمین کرام کی خدمت وتربیت کے لئے دو ماہر نگران روزانہ مکاتب کے دورے کرتے ہوئے جائزہ لے کر حالات پر بالغ نظری سے کام لیتے ہیں، اسی طرح ماہانہ معلمین کرام کی میٹنگ کے ذریعے مقامی حالات، پیش آنے والی دشواریوں سے آگاہی حاصل کرکے ٹرسٹیان اپنی بے لوث خدمات پیش کررہے ہیں، رمضان المبارک کے موقع پر حسبِ گنجائش افطاری کا نظم غریب بیواؤں اور ضرورتمندوں میں رمضان راشن تقسیم کے علاوہ عید کے موقع پر عید پیاک کا بڑے پیمانے پر نظم کیا جاتا ہے، اس سال 964 گھروں تک رمضان وعید پیاک تقسیم کئے گئے، اسی طرح عید قربان کے موقع پر 1937 مسلمانوں تک قربانی کا گوشت پہنچانے کے لیے صدور مساجد وکارکنانِ مجلس گھر گھر پہنچ کر قربانی کا گوشت پہنچارکا کام کیا ہے، نیز غریب بچیوں کی شادی، بیماروں کی تیمارداری دیگر رفاہی فلاحی خدمات مجلس کی جانب سے عمل میں آئے یہ سب آپ حضرات کے مخلصانہ تعاون سے انجام پارہے ہیں، ہم بارگاہِ الہٰی میں شکر گزار ہیں کہ اس نے کسی قدر امت کے کام کرنے کی توفیق عطا فرمائی، ہم خدام، کارکنان و ٹرسٹیان خدا کی بارگاہ میں دعاگو ہیں کہ ختم نبوت پر کی جانے والی خدمات کو قبول فرمائے، محبین کے مخلصانہ تعاون کو قبول فرمائے، اور روزِ محشر نبی آخرالزماں محمدﷺ کی شفاعت کا حقدار بنائے۔ آمین، مجلس تحفظ ختم نبوت ٹرسٹ کاماریڈی کے زیر نگرانی تعمیر مساجد کا عظیم کام انجام دیا جارہا ہے، موضع اپلوائی میں جناب سعید بھائی کی جانب سے تعمیری کام چھت کی سطح تک پہنچ چکا ہے، اور نرمال میں جناب سید احمد صاحب، سید ذاکر حسین کی والدہ محترمہ کے ایصال ثواب کی غرض سے تعمیر کا کام زور و شور سے جاری ہے، واضح رہے کہ مکمل بیسمنٹ تک کی تعمیر کا کام مقامی احباب نے عوامی چندہ سے کروایا۔ مزید دیہاتوں میں مساجد کے تقاضے آرہے ہیں، جن میں قابل الذکر رحمت نگر کاکولا تانڈہ، جہاں 22 مسلم مکانات ہیں، اور گھن پور جہاں 11 مسلم مکانات ہیں، اور سرم پلی میں 14 مسلم مکانات ہیں، نیز ان سب سے اہم کام مجلس تحفظ ختم نبوت ٹرسٹ کاماریڈی کے سنٹر کے لئے زمین خریدی گئی، جس پر کام کرنا ضروری ہے جس کے لئے 305 گز کے لئے بیعانہ دیا گیا اور وہ زمین فی گز 11 ہزار روپئے ہے، جس میں 20 لاکھ روپئے ادا کر دئیے گئے ہیں، ابھی 13 لاکھ ادا طلب ہے معاونین سے تعاون کی اپیل ہے، مولانا نظرالحق قاسمی ناظر مجلس نے کہا کہ یہ معلمین ایسے دیہات میں جہاں بنیادی سہولیات کا بھی فقدان ہے، پھر بھی بڑے مجاہدوں کے ساتھ خدمات انجام دے رہے ہیں، ہمیں ضرورت ہے اس بات کی کہ ہم دیہاتوں کے معلمین کی فکر کریں، نیز سلسلۂ خطاب کو جاری رکھتے ہوئے کہا کہ گاؤں اور دیہات کے حالات نمازیوں اور مصیلوں کے اعتبار سے بنسبت شہر کے بہت بہتر ہے، شہر میں نماز اور دینی علمی فکری سطحیت پر کام کرنے کی اشد ضرورت ہے، اس مشاورتی اجلاس سے الحاج سیدعظمت علی سکریٹری مجلس نے عوام الناس سے اپیل کی کہ تاج ختم نبوت کی حفاظت کرنے اور اس کا کام کرنے والوں کی حیثیت ذاتی محافظ یعنی پرسنل گارڈ کی ہے، ممکن ہے دوسرے کام کرنے والے حضرات کا درجہ و مقام بلند ہو لیکن بادشاہ کے سب سے زیادہ قریب اسکے ذاتی محافظ ہوتے ہیں اور بادشاہ کو سب سے زیادہ اعتماد بھی انہی ذاتی محافظوں پر ہوتا ہے، اس لیے جو لوگ تحفظ ختم نبوت کا کام کرتے ہیں وہ حضورﷺ کے سب سے زیادہ قریب ہیں، اور آپﷺ کو سب سے زیادہ اعتماد انہی پرہے، دنیا تو ایسے ہی ختم ہوجائے گی، اصل مسئلہ آخرت کا ہے، اسکی فکر کریں، اور تحفظ ختم نبوت پر کام کریں، اور اپنی آخرت کا سامان تیار کریں، عبدالواجد علی نے مجلس کے معلمین کی خدمات کو سراہا اور اپیل کی جہاں چھوٹوں کی تعلیم پر محنت کی جارہی ہے اسی طرح نوجوانوں کے لیے بھی وقت نکال کر انکی فکر کریں، گاؤں میں جہاں جہاں بھی آپ کام کر رہے ہیں وہاں عورتوں اور لڑکیوں کی اصلاح کے لیے کوشاں رہیں۔ جناب جاوید علی رکن تاسیسی مجلس نے معلمین کا شکریہ ادا کیا کہ آپ لوگ دور دراز سے آکر بڑی مشقتیں برادشت کرتے ہوئے دینی اور تعلیمی کام منظم مجلس کے پرچم تلے کررہے ہیں ہم آپ حضرات کے بڑے محسن ہیں، نیز دعا کی کہ ٹرسٹیان مجلس کی خدمات کو اللہ تعالیٰ شرف قبولیت سے نوازے محمد فیروز الدین پریس سکریٹری جمعیۃ کاماریڈی ودیگر ذمہ داران نے بھی مجلس تحفظ ختم نبوت کاماریڈی کام اور کاز کو آگے بڑھانے کا عزم کیا مولانا منظور عالم صاحب نے معلمین کرام کی تفصلی رپورٹ پیش کی، مولانا مفتی محمد خواجہ شریف مظاہری ترجمان مجلس تحفظ ختم نبوت کاماریڈی نے اجلاس کی کاروائی چلائی، جلسہ کا آغاز حافظ عبدالواجد علی حلیمی معاون ناظم مدرسہ مصباح الہدیٰ کاماریڈی کی قرات کلام پاک سے ہوا، اور حافظ سعود صاحب معلم مکتب تاڑوائی نے نعت شہہءدیںﷺ پیش کی، جناب محمد انور صاحب دامت برکاتہم رکن تاسیسی نے اجلاس کی سرپرستی فرمائی۔ حافظ محمد یوسف حلیمی انور نائب صدر جمعیۃ علماء کاماریڈی کی رقت انگیز دعاء پر جلسہ لا اختتام عمل میں آیا اور حافظ مشتاق حلیمی نے تمام شرکاء کا شکریہ ادا کیا،

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

Leave a Reply

متعلقہ خبریں

Back to top button
Close
Close