حیدرآباد

بہتر تحقیق کے لیے تنقیدی مشاہدہ اور وسیع مطالعہ نا گزیر : اردو یونیورسٹی میں آن لائن ورکشاپ کا افتتاح ۔ پروفیسر رحمت اللہ کا خطاب

حیدرآباد2مارچ(آئی این ایس انڈیا) ڈین ریسرچ اینڈ کنسلٹنسی اور مر کز پیشہ ورانہ فروغ برائے اساتذۂ اردو ذریعۂ تعلیم (سی پی ڈی یو ایم ٹی)،مولانا آزاد نیشنل اردو یونیورسٹی کے ا شتراک سے ریسرچ اسکالرس کے لیے 5 روزہ آن لائن ورکشاپ کا کل افتتاح عمل میں آیا۔ صدارتی خطاب پیش کرتے ہوئے کارگزار شیخ الجامعہ، پروفیسر ایس ایم رحمت اللہ نے کہا کہ بہتر تحقیق کے لیے تنقیدی مشاہدہ اور وسیع مطالعہ نا گزیر ہے۔ انہوں نے ریسرچ اسکالرس کو مشورہ دیا کہ تحقیق برائے تحقیق کے بجائے تحقیق برائے تعمیر پر توجہ مرکوز کرنی چاہیے۔ انہوں نے مزید کہا کہ قومی تعلیمی پالیسی 2020 بھی تحقیق کی اہمیت وافادیت پر زور دیتی ہے ۔ اس موقع پر پروفیسر صدیقی محمد محمود ، انچارج رجسٹرار نے کہا کہ طلبہ کو موضوع کے حوالے سے غور و فکر کرنے کے بعد واضح تصور قائم کرتے ہوئے غیر جانب دار ہو کر مدلل بات کرنی چاہیے۔ اچھی تحقیق کے لیے تخلیقی صلاحیتوں کے ساتھ مقالہ نویسی کی مہارتوں کو بھی اجاگر کرنا چاہیے۔ قبل ازیں پروفیسر سلمیٰ احمد فاروقی ، ڈین ریسرچ اینڈ کنسلٹنسی نے ورکشاپ کے اغراض و مقاصد بیان کر تے ہوئے کہاکہ آن لائن ورکشاپ کے لیے ملک بھر کے ماہرین کی خدمات حاصل کی جارہی ہیں۔ افتتاحی تقریب کی کارروائی پر وفیسرمحمد عبدالسمیع صدیقی، ڈائرکٹر، مرکز، پیشہ ورانہ فروغ برائے اساتذۂ اردو ذریعۂ تعلیم نے چلائی۔ آخر میں ڈاکٹر اے سبھاش ،اسسٹنٹ پروفیسر، مطالعاتِ دکن نے ہدیۂ تشکر پیش کیا۔

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

متعلقہ خبریں

Back to top button
Close
Close