حیدرآباد

جامعہ نعمانیہ ویکوٹہ، میں تقریب تکمیل حفظ قرآن

آندھرا پردیش ( ہندوستان اردو ٹائمز) آج 16/فروری ،2021/ ء بروز منگل بعد نماز ظہر جامعہ نعمانیہ ویکوٹہ آندھرا پردیش کے پرشکوہ "مسجد ابراہیم” میں تکمیل حفظ قرآن مجید کا ایک پروگرام منعقد ہوا، جس کی صدارت جامعہ کے عمید مکرم حضرت مولانا سید ظہیر احمد صاحب قاسمی دامت برکاتہم نے فرمائی، دو طالب علم عزیزم حافظ طیب سلمہ اور عزیزم حافظ حسین الرحمن سلمہ نے مدیر محترم کے سامنے قرآن مجید کی آخری آیتیں پڑھ کر حفظ قرآن مجید کی تکمیل کی۔
معلوم ہونا چاہیے کہ قرآن مجید نبی کریم ﷺ کا زندہ جاوید معجزہ ہے، یہ واحد کتاب ہے جس کے حفاظت کی ذمہ داری باری تعالیٰ نے خود اپنے ذمہ لی ہے، اس سے بیشتر تمام آسمانی کتابوں کی حفاظت کی ذمہ داری ان کتابوں کے ماننے والوں کو سپرد کیا گیا تھا جیسا کہ قرآن مجید میں اللہ تعالی نے فرمایا:
بما استحفظوا من كتاب الله وكانوا عليه شهدا
کیونکہ ان کو اللہ کی کتاب کا محافظ بنایا گیا تھا، اور وہ اس کے گواہ تھے۔
جب کہ قرآن مجید کامعاملہ اس کے برعکس ہے اس کے محافظ خود باری تعالیٰ ہیں، ارشاد باری تعالیٰ ہے:
انا نحن نزلنا الذكر وانا له لحافظون(الحجر:9)
حقیقت یہ ہے کہ یہ ذکر (یعنی قرآن) ہم نے ہی اتارا ہے، اور ہم ہی اس کی حفاظت کرنے والے ہیں۔
اللہ رب العزت نے اس کتاب مبین کی ہر طرح سے حفاظت کی ہے،اسی حفاظت کا ایک شق حفظ قرآن مجید بھی ہے، جو بھی حافظ قرآن ہوتا ہے وہ دراصل محافظ قرآن ہوتا ہے، یہ اتنی بڑی شرف یابی ہے کہ شاید اس بوئے گل میں اس شرف یابی کا کوئی ثانی نہیں، کیونکہ خود باری تعالیٰ محافظ قرآن ہیں اور اسی صفت سے ایک حافظ قرآن مجید بھی متصف ہوتا ہے، زہے قسمت!
یہ رتبہ بلند ملا جسے مل گیا
ہر مدعی کے واسطے دارو رسن کہاں
یہ دونوں طالب علم بھی اب محافظ قرآن ہوچکے ہیں، اللہ تعالی ان کے حفظ میں پختگی اور پائیداری عطا فرمائے، اور مزید علم کے حصول کے لئے قبول فرمائے آمین
اس تقریب سعید میں حضرت مولانا مبارک صاحب قاسمی دامت برکاتہم (نائب مہتمم جامعہ نعمانیہ ویکوٹہ) حضرت قاری سید نظام الدین صاحب دامت برکاتہم (امام و خطیب:جامع مسجد، ویکوٹہ) اور ان کے علاوہ جامعہ کے تمام اساتذہ کرام حضرت مولانا سید ضیاء اللہ صاحب قاسمی، مولانا مظہر صاحب قاسمی، مولانا نیاز صاحب رحیمی، مولانا عبدالقدیر صاحب رحیمی، قاری ابراہیم صاحب رحیمی، حافظ جابر صاحب رحیمی، حافظ ایاز صاحب، حافظ دلشاد صاحب (امام مسجد فاروق،رحمت نگر،ویکوٹہ) عالی جناب سبیل سر وغیرہ موجود تھے، شہر کے بھی کچھ احباب موجود تھے، اخیر میں صدر جلسہ کی رقت آمیز دعا پر پروگرام کا اختتام ہوا، بعد دعا طعام کا بھی نظم تھا، ماشاءاللہ عمدہ طعام کا نظم کیا گیا تھا۔
اللہ تعالی جامعہ نعمانیہ ویکوٹہ کے ذمہ داروں کو خدمت دین کے لئے قبول فرمائے، اور اس ادارہ کو دن دونی رات چوگنی ترقیات سے ہمکنار کرے، نیز اس چمنستان علم کو تاقیام قیامت آباد و شاداب رکھے۔ (آمین)

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

متعلقہ خبریں

Back to top button
Close
Close