جھارکھنڈ

وزیراعلیٰ ہیمنت سورین کے قافلہ پر حملہ کا کیس : کوتوالی اور سکھ دیو نگر سٹی تھانہ انچارج معطل ، فرائض میں شدید غفلت کا الزام

رانچی، 6جنوری ( آئی این ایس انڈیا ) وزیراعلیٰ ہیمنت سورین کے قافلے پر حملے کے تناظرمیں ڈی جی پی ایکشن میں ہے۔ بدھ کے روز ڈی جی پی نے فرائض میں غفلت برتنے کے الزام میں سکھ دیو نگر پولیس تھانہ انچارج سنیل تیواری اور کوتوالی تھانہ انچارج برج کمار کو معطل کردیا۔ کشور گنج علاقہ جہاں یہ واقعہ پیش آیا، یہ علاقہ ان دو تھانوں کے تحت آتا ہے۔ معاملہ کی سنگینی کو دیکھتے ہوئے ڈی جی پی بدھ کے روز رانچی کے ایس ایس پی آفس پہنچے۔ یہاں انہوں نے ضلع کے تمام تھانیداروں کے ساتھ ایک میٹنگ کی۔ڈی جی پی کے ساتھ میٹنگ میں اے ڈی جی اسپیشل برانچ ، اے ڈی جی سی آئی ڈی ، آئی جی رانچی ، ایس ایس پی ، سٹی ایس پی ، ر انچی کے تمام ڈی ایس پی اور تمام پولیس انچارج نے شرکت کی۔ ڈی جی پی نے بتایا کہ اس معاملہ کی تحقیقات کے لئے ایک اعلی سطحی کمیٹی تشکیل دی گئی ہے۔ تحقیقات کے دوران قصوروار ثابت ہونے والوں کے خلاف کارروائی کی جائے گی۔اس سے قبل منگل کے روز اسی معاملہ پر رانچی کے ایس ایس پی سریندر کمار جھا سے بھی ایک میٹنگ کی گئی ہے۔ نیز معاملے کی سنگینی کے پیش نظر حکومت نے پورے واقعے کی تحقیقات کے لئے ایک دو رکنی اعلی سطحی کمیٹی تشکیل دی ہے۔ کمیٹی سے کہا گیا ہے کہ وہ وزیر اعلی کے قافلے پر حملے کی تحقیقات کرکے تفصیلی رپورٹ پیش کریں۔خیال رہے کہ4 جنوری کو وزیر اعلی ہیمنت سورین کے قافلہ پر کشور گنج چوک کے قریب اورمانجھی کے واقعہ کے تناظر میں احتجاج میں شامل شرانگیزوں نے منصوبہ بند سازش کے تحت قافلے کو نشانہ بنانے کی ناپاک جسارت کی ، تاہم رانچی پولیس نے عقلمندی کا مظاہرہ کرتے ہوئے وزیر اعلی کے قافلے کو محفوظ طریقہ سے وزیر اعلی کی رہائش گاہ پر موڑ دیا۔

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

متعلقہ خبریں

Back to top button
Close
Close