حیدرآباد

جمیل نظام آبادی کی ادبی و صحافتی خدمات ناقابل فراموش، جلسہ خراجِ عقیدت سے پروفیسر ایس اے شکور کا خطاب

حیدرآباد (پریس نوٹ) اضلاع کے شعراء کی ادبی خدمات کو اجاگر کرنے کی ضرورت ہے تاکہ اردو کی نئی نسل کو ان کے کارناموں سے واقفیت حاصل ہو ان خیا لات کا اظہار پر وفیسر ایس اے شکور سابق صدر شعبہ اردو جامعہ عثمانیہ و سابق ڈائریکٹر اردواکیڈمی تلنگانہ نے بزم کہکشاں شاخ حیدر آباد کے جلسہ خراج ِعقیدت جمیل نظام آباد ی کے صدارتی خطاب سے کیا انہوں نے کہا کہ جمیل نظام ا ٓبادی نے نصف صدی تک اردو ادب کی عظیم خدمات کی ہے جس کو فراموش نہیں کیا جاسکتا ۔

 

ادارہ گونج کے ذریعے جمیل نظام آبادی نے سو سے زائد تصانیف کی اشاعت عمل لائی ،سیکٹروں مشاعروں کا انعقادکیا ،مسلسل اپنے خرچ پر ماہنامہ گونج کی پابندی سے اشاعت عمل میں لائی۔ضرورت ہے کہ ان کے منتخبہ کلام کو کتاب کی شکل میں شائع کیا جائے۔انہوں اس موقع پر اردو کتب خانوں کی زبو حالی پر تشویش کا اظہار کیا اور نوجوانوں کو اردو کے عظیم سرمائے کے تحفظ کے لیے آگے آنے کا مشورہ دیا۔ممتاز ماہر تعلیم ایم اے حمید نے کہاکہ جمیل نظام آبادی کی ادبی خدمات کافی طویل ہے ۔انہوں نے بڑی محنت سے ادبی دنیا میں اپنا ایک بلند مقام بنایا تھا،ماہنامہ گونج کو پابندی سے شائع کرنے کا ان میں ایک جنون تھا،انہوں نے ادارہ گونج کے ذریعے کئی شعراء و ادبا کی کتابوں کی اشاعت عمل میں لاتے ہوئے انہیں صاحب کتاب بنایا تھا۔

 

قبل ازیں سنیئر شاعر صلاح الدین نیئر نے اپنے خطاب میں کہا کہ جمیل نظام آبادی ایک مخلص آدمی تھے ۔سنجیدگی سے انہوں نے ادب کی خدمت کی ہے ،ا ضلاع میں مشاعروں کا انعقاد عمل میں لانا،مشاعروں میںطویل سفر کرتے ہوئے شر کت کرنا،رسالہ کی پابندی سے اشاعت عمل لانا کسی کارنامہ سے کم نہیں ہے ،جمیل نظام آبادی نے ادب کی گراں بہا خدمات انجام دیں ۔ڈاکٹر ناظم علی نے تجویز رکھی کہ اردو اکیڈیمی کے کارنامہ حیات ایورڈ کو جمیل نظام آبادی کے نام سے موسوم کیا جائے۔قبل ازیں حلیم بابر صدر بزم کہکشاں نے خیر مقدمی تقریر کی،ا س جلسہ سے ڈاکٹر عزیز سہیل،سلیم فاروقی ،جلیس بھارتی نے بھی مخاطب فرمایا۔

 

جلسہ کا آغاز یوسف روش کی قرآت کلام پاک سے ہوا۔جلسہ کی نظامت ڈاکٹر ناظم علی نائب صد ر بزم کہکشاں نے حسن خوبی سے انجام دی ۔جلسہ کے فوری بعد غیر طرحی مشاعرہ سنیئر شاعر صلاح الدین نیئر کی صدارت میںمنعقد ہوا۔مشاعرہ کی نظامت شاعر لطیف الدین لطیف معتمدنے انجام دی۔مشاعرہ میں صدر مشاعرہ کے علاوہ منتخب نمائندہ شعراء حلیم بابر، ڈاکٹر طیب پاشاہ قادری ،یوسف روش، لطیف الدین لطیف، جہانگیر قیاس، سہیل عظیم نے کلام پیش کیا۔ڈاکٹرسہیل کے شکریہ پر جلسہ و مشاعرہ کا اختتام عمل میں آیا۔حلیم بابرنے مسرور عابدی کے انتقال پر تعزیتی قرار داد پیش کی۔ منجانب:نائب صدر بزم ڈاکٹر ناظم علی حیدرآباد
9603018825

ہماری یوٹیوب ویڈیوز

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button