جموں کشمیر

واڑاڈ نمبر 60 جانی پور میں محکمہ پی ایچ ای کی بڑی لاپرواہی۔۔پانی کی ٹنکی چاروں طرف سے لیک۔ مرامت تک نہیں کی۔

واڑاڈ نمبر 60 جانی پور میں محکمہ پی ایچ ای کی بڑی لاپرواہی۔۔پانی کی ٹنکی چاروں طرف سے لیک۔ مرامت تک نہیں کی۔
جموں( ممتاز تاتنترے)
جموں وسٹ جانی پور واڑاڈ نمبر۔ 60 میں پچہلے۔ پانچ سال سے ایک بڑی پانی کی ٹنکی کام چل رہا تھا جو چھہ ماہ پہلے مکمل ہو گئ تھی۔ ابھی صرف چھہ ماہ بھی نہیں ہوے اس کو استمال کرتےاس کی چاروں طرف دیواروں سے پانی نکل رہا ہے ۔ جس سے وہاں کے مقامی عوام کافی ڈر محسوس کر رہی ہے مقامی لوگوں کا کہنا ہے اس ٹنکی پر کڑوں کی لاگت لگنے کے باوجود بھی یا حال ہے ۔سارا پانی برباد ہوا رہا ہے ۔اور اس کے اس پاس دو سو گھر ہیں جن کو اب ڈر ستا رہا ہے اگر اسکی جلدی مرمت کا کام نہیں ہوا کوئی بڑا حادثہ بھی ہو سکتا ہے جس کا زمیندار مکمہ پی ایچ ہو گا جن کی خاموشی کی وجہ سے اب تک اس کو کوئی مرامت کا کام نہیں ہوا نہیں ہی کوئی کروائی ہوئی ۔یہاں کے مقام عوام نے یا بھی الزام لگایا ہے انکو صرف چار دن میں ایک بار پانی آتا ہے
جس سے وہ کافی پریشان ہیں جب کی ہزاروں لیٹر پانی دن رات برباد ہو رہا ہے ۔جس کی وجہ صرف مکمہ کی لاپروای
ہے ۔ایک طرف جموں کے مختلف علاقوں میں پانی کی شدید قلت کی وجہ سے عوام پریشان ہے دوسری طرف پی ایچ ای کی لاپرواہی سے ہزاروں لیٹر پانی برباد ہورہا ہے اگر یہ پانی استمال کرنے کے کام آتا شاہد پانی کی قلعت میں کچھ کمی کم ہوتی۔ ہمارے نمائندے نے جب اس بارے میں مقامی واڑاڈ کی کارپریٹر سے بات کی انہوں نے صاف انکار کر دیا انکو اس چیز کا کوئی علم نہیں تھا۔ مگر اب میں اس خد موقہ کر کے آگے کی کروائی شروع کرو گی ۔

مزید پڑھیں

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

متعلقہ خبریں

جواب دیجئے

Back to top button
Close
Close