جموں کشمیر

پنتھرس سپریمو نے جموں وکشمیر سے کنیا کماری تک پارٹی کے تمام ریاستی لیڈروں سے آن لائن کانفرنس کی

جموں16جنوری(آئی این ایس انڈیا) جموں وکشمیر نیشنل پنتھرس پارٹی کے سرپرست اعلی اور بانی پروفیسر بھیم سنگھ نے پارٹی کے کئی ریاستی لیڈروں کے ساتھ آج ہنگامی آن لائن کانفرنس کی۔ان ریاستی لیڈروں میں تملناڈو کے صدر مسٹر نیش امبیٹھکر، اترپردیش کے صدر مسٹر رام آدھان سنگھ بشین، راجستھان کے صدر مسٹر انل شرما، دہلی کے صدر راجیو جولی کھوسلہ ، ہریانہ کے صدر مسٹر ششی بھارت بھوش، ایڈوکیٹ، مغربی بنگال کے صدر مسٹر مانس بنرجی اور جموں وکشمیر کے صدر مسٹر بلونت سنگھ منکوٹیا اور دیگر شامل تھے۔پنتھرس سربراہ پروفیسر بھیم سنگھ نے پنتھرس پارٹی کے لیڈروں کے ساتھ کانفرنس میں مرکزی حکومت کے ذریعہ پانچ اگست، 2019کو1846میں قائم کی گئی جموں وکشمیر ریاست کے درجہ مسمار کرکے اسے مرکز کے زیرانتظام علاقہ میں تبدیل کرکے ریاست کے لوگوں کی توہین کئے جانے پر صدمہ کا اظہار کیا۔انہوں نے پنتھرس پارٹی کے لیڈروں تک جموں وکشمیر کے عوام کا یہ پیغام پہنچایا کہ یہ جموں وکشمیر کے باشندے ہی تھے جنہوں نے جموں وکشمیر کو پاکستان میں ضم کرنے کی مخالفت کی تھی۔انہوں نے کہا کہ یہ جموں وکشمیر ہی تھا جس نے ہندستان کے سیکولرازم کا پیغام دیا جس کا نعرہ مہاتما گاندھی نے 1946میں دیا تھا۔پنتھرس سپریمو نے پنتھرس پارٹی کی ملک کی تمام قیادت کو اس برس مارچ2021 کے پہلے ہفتہ میںنئی دہلی میں ہونے والے قومی کنونشن میں شامل ہونے کی دعوت دی۔انہوں نے کہا کہ پنتھرس پارٹی ہندستان میں سرگرم تمام تسلیم شدہ قوم پرست اور سیکولر سیاسی جماعتوں کی سیاسی قیادت کو متحرک کرے گی اور انہیں پنتھرس پارٹی کے قومی کنونشن میں مدعو کیا جائے گا۔انہوں نے کہا کہ پنتھرس پارٹی کا مشن ہے کہ وہ کشمیر سے کنیاکماری اور دوارکا سے امپھال تک تمام سیکولر سماجی جمہوری اور قوم پرست سیاسی جماعتوں کو متحد کرے۔انہوں نے کہاکہ اگر پنتھرس پارٹی کے یوم تاسیس 23مارچ تک جموں وکشمیر کا ریاست کا درجہ بحال نہیں کیا گیا توہندستان میں ایک قومی تحریک چلائی جائے گی۔پنتھرس پارٹی نے جموں وکشمیر کے اسمبلی حلقوں کی حد بندی کے بعد ریاستی اسمبلی انتخابات کرائے جانے کا مطالبہ بھی کیا۔

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

متعلقہ خبریں

Back to top button
Close
Close