دیوبند

جمعیۃ علماء ہند شاخ بڈھانہ کے چوتھے جلسہ سیرۃ النبی کا انعقاد

والدین اولاد کی تعلیم وتربیت پر خصوصی توجہ دیں : حافظ شیردین

دیوبند، 21؍ اکتوبر (رضوان سلمانی) قصبہ بڈھانہ کی نئی بستی میں واقع آئی اے پبلک اسکول میں جمعیۃ علماء ہند شاخ بڈھانہ کے زیر اہتمام سیرت النبیؐ کا انعقاد کیا گیا جس میں اسکول کے طلبہ کو ان کے رہن سہن اور عمل کے حوالے سے اللہ کے رسولؐ کے ارشادات سنائے گئے۔ انصاف وغیرہ جمعیۃ علماء بڈھانہ کے شہر صدر حافظ شیردین نے بیان کرتے ہوئے کہا کہ وہ ہمیشہ متأثرین کے لیے کھڑے رہے اور ان کی حمایت کی۔ انہوں نے جلسہ میں شامل بچوں سے کہا کہ اللہ کے نبی صلی اللہ علیہ وسلم نے اپنی زندگی میں کبھی جھوٹ نہیں بولا۔ انہوں نے کہا کہ ہمیں کبھی جھوٹ نہیں بولنا چاہیے۔

انہوں نے کہا کہ تمام بچوں کو اپنے والدین اور اساتذہ کا احترام کرنا چاہیے۔ مولانا نے اولاد کے حقوق بیان کرتے ہوئے کہا کہ والدین کے ذمہ لازم ہے کہ وہ اپنی اولاد کی تعلیم وتربیت پر خصوصی توجہ دیں ، علوم شرعیہ ، علوم عصریہ سے انہیں مالا مال کریں ۔ انہوں نے والدین کے حقوق پر روشنی ڈالتے ہوئے کہا کہ قرآن مجید میں اللہ تبارک وتعالیٰ نے اپنی عبادت کا حکم دینے کے بعد فوراً والدین کے ساتھ حسن سلوک کرنے کا حکم دیا ہے۔ ان تمام چیزوں کو تفصیل سے بتایا جسے بچوں نے غور سے سنا۔انہوں نے مزید کہا کہ نبی کریم حضرت محمد مصطفیٰ صلی اللہ علیہ وسلم کے راستے میں جاتے ہوئے ان پر کچرا پھینکا گیا لیکن آپ صلی اللہ علیہ وسلم نے کچھ نہ کہا۔

حافظ تحسین رانا نے کہا کہ نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم ہمیشہ بیماروں کے گھر تشریف لے جاتے اور ان کی خیریت دریافت کرتے،ہمیں بھی نبی صلی اللہ علیہ وسلم کی تعلیمات پر عمل کرتے ہوئے بیماروں کی تیمارداری کرنی چاہئے ۔ انہوں نے کہا کہ ہم ایسے نبیؐ کی امت میںہیں جو کسی ایک گروہ یا ایک علاقے یا ایک قوم کے لئے مبعوث نہیں ہوئے بلکہ وہ مجسم رحمت ہیں، ہر دو جہاں کے لئے آپ صلی اللہ علیہ وسلم ہادیٔ اعظم ہیں ، انسانیت کے لئے آپ صلی اللہ علیہ وسلم رہنما ہیں ، لیکن افسوس کہ ہم آپ صلی اللہ علیہ وسلم کے اخلاقِ حسنہ سے، اپنے رویہ سے کنارہ کشی اختیار کرکے اغیار کے چنگل میں اس طرح پھنس چکے ہیں ، معلوم ہوتے ہوئے بھی کہ نجات آپ صلی اللہ علیہ وسلم کی سوچ وفکر واسلوب کو اپنانے میں ہیں لیکن ہم اس کو اپنانے سے قاصر ہیں۔

آج ضرورت ہے کہ ہم اللہ کے رسول صلی اللہ علیہ وسلم کی تعلیمات کو عام کریں اور دنیا کو پیغام دیں کہ اللہ کے رسول صلی اللہ علیہ وسلم کی پیروی میں ہی سو فیصد کامیابی ہے۔ آج دنیا میں جو بھی نظر آرہا ہے وہ سب حضور پاک صلی اللہ علیہ وسلم کا ہی صدقہ ہے۔ جلسہ میں ایک بچی اور ایک بچے کو نقد رقم دے کر حوصلہ افزائی کی گئی۔حافظ تحسین نے طلبہ کے روشن مستقبل کے لیے دعا کی۔ اس دوران جملہ اسکول کے اسٹاف کے علاوہ جلسوں کے کنوینر جمعیۃ علماء کے ضلع سکریٹری اور میڈیا انچارج محمد آصف قریشی، نوید فریدی، شہر سکریٹری، سورج سینی پرنسپل، آباد ایڈوکیٹ منیجر وغیرہ موجود تھے۔

ہماری یوٹیوب ویڈیوز

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button