تعلیم

اے آئی سی ٹی ای نے لیا بڑا فیصلہ : اب انجینئرنگ کے لئے ریاضی ، طبیعیات اور کیمسٹری لازمی مضامین نہیں

نئی دہلی،13؍مارچ(آئی این ایس انڈیا) آل انڈیا کونسل برائے ٹیکنیکل ایجوکیشن (اے آئی سی ٹی ای) نے ایک اہم فیصلہ لیا ہے۔ اس کے مطابق انجینئرنگ کورسز میں داخلے کے لئے اب ریاضی ، طبیعیات اور کیمسٹری لازمی مضامین نہیں ہوںگے ۔ اے آئی سی ٹی ای نے ان مضامین کو یو جی انجینئرنگ کورس بی ای اور بی ٹیک میں داخلے کے لئے اختیاری بنا دیا ہے۔ اس کے مطابق اب ان مضامین کی 12 ویں میں لازمیت کو ختم کردیا گیا ہے۔قواعد میں ترمیم کے مطابق طلبہ کو مندرجہ ذیل 14 مضامین میں سے تین میں 12 ویں پاس کرنا ہوگا۔ یہ 14 مضامین ہیں – فزکس ، ریاضی ، کیمسٹری ، کمپیوٹر سائنس ، الیکٹرانکس ، انفارمیشن ٹکنالوجی ، حیاتیات ، بائیوٹیکنالوجی ، تکنیکی پیشہ ور مضامین ، زراعت ، انجینئرنگ ، گرافکس بزنس اسٹڈیز کے سمیت دیگر مضامین۔ اس کے تحت 12 ویں میں ان مضامین میں تعلیم حاصل کرنے والے طلبہ انجینئرنگ کورس میں بھی داخلہ لے سکتے ہیں۔انجینئرنگ کے انڈرگریجویٹ کورس میں داخلے کے لئے طلبہ کو 12 ویں جماعت میں کم از کم 45فیصد نمبرات کی ضرورت ہوگی۔ اس سلسلے میں اے آئی سی ٹی ای کے صدر انیل نے کہا کہ ہمیں نئے مضامین کی وجہ سے چیلینجز کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔ بہت سے طلبا نے سوال کیا کہ جب ان کے پورے کیریئر میں کیمسٹری کا کوئی استعمال نہیں ہوتا ہے ، تو پھر انہیں اس مضمون کا مطالعہ کیوں کرنا پڑتا ہے۔ اسی طرح بہت سارے طلباء نے حیاتیات کی تعلیم حاصل کرنے کا مطالبہ کیا کیونکہ انہیں بعد میں بایوٹیکنالوجی کو اپنانا ہوگا۔ لہذا ہم ان طلبا کے لئے ایک نئی ونڈو تشکیل دے رہے ہیں جنہوں نے نہ تو ریاضی یا طبیعات یا کیمسٹری لیا ہے ، لیکن انجینئرنگ میں داخلہ لینا چاہتے ہیں۔ ایسے طلبا کے لئے قواعد میں ترمیم کیے جارہے ہیں۔

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

Leave a Reply

متعلقہ خبریں

Back to top button
Close
Close