تعلیم

اساتذہ اپنی روزمرہ کی تعلیم کو موثر بنانے کے لئے خصوصی سرگرمیاں انجام دیں

بارسی ٹا کلی ضلع اکولہ (ذوالقرنین احمد )  اساتذہ کو چاہئے کہ وہ اپنی روزمرہ کی تدریس کو موثر بنانے کیلئے  خصوصی سرگرمیاں نافذ کریں ، اور ساتھ مہاراشٹر حکومت سے منظور شدہ صد فیصد  پڑھنے  کی بنیادی  صلاحیت کے پروگرام کے تحت فراہم کردہ  .تعلیمی   صندوق  کا استعمال کریں اور اس کے لئے خصوصی کوشش کریں ۔ یہ خطاب ریاست کے  اردو تعلیمی کانفرنس کے تحصل. کار  جناب انیسد ین سر نے  بارسی ٹاکلی . پنچایت سمیتی  میں منعقد ا دوسری تعلیمی کانفرنس میں اساتذہ سے خطاب کرتے ہوئے کہا اس منعقدہ پروگرام کے صدر بارسی ٹاکلی کے  گروپ ایجوکیشن آفیسر رتن سنگھ پوار ، تھے وہیں مہمان خصوصی کے طور پر  ضلع تعلیمی و تربیتی ادارہ کے معاون مضمون   بھیم سنگھ راٹھور ،تھے  اور ضلعی سطح کےتعلیمی کانفرنس کے تحصیل کار  شاہد اقبال خان محمد عرفان  سید سلیم سید حکیم رو ح اللہ خان تھے  ستمبر 2019 سے  مہاراشٹر میں اردو اساتذہ کے لیے اردو میں تعلیمی کانفرنس کا انعقاد کیا جانے لگا اس تعلیمی کانفرنس میں اساتذہ کو نئی معلومات سے لبریز کیا جاتا ہے اور دوران تدریس آنے والی مشکلات کو کس طریقے سے حل کیا جائے اس پر بھی بہت ساری تجاویز پیش کی جاتی ہے اردو تعلیمی کانفرنس کا مواد مہاراشٹر کی تعلیمی ادارے سے . منظور ہو کر آتا ہے اور اسی کے تحت  اساتذہ کو تربیت دی جاتی ہے  اس موقع پر اساتذہ کو تحصل کا رو نے تعلمی تکمیلی سرگرمی سننا گفتگو پڑنا .  اور د ی کشہ ایپ سے متعلق م مزید معلومات دیں اور دوران تدریس  اسے  استعمال کرنے کے لیے کہا گیا اس موقع پر تحصیل کے اردو اسکولوں کے     77 اساتذہ موجود تھے۔ جن میں  محمد سجاد رضوان الدین شاکر علی قمر سر عبد الصمد   جا و ید اطہر خان شبیر خان رئیس احمد مشریف اللہ خان سید صادق زاہد الرحمٰن عبد تاریخ فضل سلیم خان محمد شارق اعجاز شاہ شاکر ہارونی عمران علی غلام علی محمد فاروق شیخ مبین شکیلودین محمد عرفان صمد خان  . اس موقع پر  کے پر  تعلقہ گائڈ شاہد اقبال خان محمد عرفان سر  سلیم اختر راہل اللہ خان کے ساتھ ساتھ تمام تعلیمی مشن ، چندن سدانشیو اور گنیش راٹھود نے بھرپور کوشش کی۔پروگرام کی نظامت کا فریضہ محمد عرفان نے ادا کیااس موقع پر تحصیل کے اساتذہ بڑی تعداد میں موجود تھے

مزید پڑھیں

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

متعلقہ خبریں

جواب دیجئے

Back to top button
Close
Close