تعلیم

جامنیر اردو اساتذہ کی رہنمائی کے لیے تعلیمی کانفرنس کا انعقاد!

جامنیر اردو اساتذہ کی رہنمائی کے لیے تعلیمی کانفرنس کا انعقاد

جامنیر ضلع جلگاؤں 30 ( ذوالقرنین احمد) ریاستِ مہاراشٹر میں طلبا و طالبات کی ہمہ گیر ترقی کے لئے ‘تعلیمی ترقی یافتہ مہاراشٹر’ اس مشن کے تحت اختراعات کو عمل میں لایا جا رہا ہے۔ اسی مشن کا سب سے اہم اور کلیدی مقصدہے کہ ریاست بھر میں تعلیم حاصل کرنے والے طلبا پڑھنا اور لکھنا سیکھ لیں۔ اور اس پر عمل باقاعدگی سے نئی نہج پر کیا جا رہا ہے۔ اردو اساتذہ کے لیے علاحدہ شعبہ نہ ہونے کے باعث اب تک اردو اساتذہ تذبذب کا شکار تھے لیکن ریاستی سطح سے لے کر تعلقہ و مراکز پر اردو اساتذہ کے لئے اب علاحدہ پلیٹ فارم سرگرم عمل ہے جو بحسن و خوبی اپنے فرائض و خدمات کو انجام دے رہا ہے۔جامنیر تعلقہ کے اردو اساتذہ کے لئے آج 30 ستمبر کو تعلیمی کانفرنس کا انعقاد کیا گیا۔جس میں کانفرنس کی غرض وغایت و نت نئے تجربات، ایجادات اور اختراعات سے کس طرح اردو اساتذہ کو مستفیض کیا جاسکتا ہے اس کے تحت تفصیلات پیش کی گئی۔ پروگرام کا آغازتلاوت قرآن مجید سے ہوا۔ اس کے بعد زاہد سر نے حمد پیش کی۔ ضلع پریشد اردو اسکول کے اول جماعت کے طالب علم خضر عبد الواحد اور جامنیر اردو لڑکیوں کے مدرسے کی ایک طالبہ نے انتہائی خوبصورت انداز میں مدحت رسول پیش کی۔ اس کانفرنس کی صدارت شبیر سر نے کی، مہمانان میں اسمعیل سر، لطیف سر، اسلم سر، وقار سر، الطاف علی سر، افضل سر و دیگر موجود تھے۔ اس کے بعد باقاعدہ تعلیمی کانفرنس کے طئے شدہ نکات پر روشنی ڈالی گئی۔*ریاستی مطالعہ گروپ کے رکن ڈاکٹر صابر خان* نے تعلیمی ترقی یافتہ مہاراشٹر کے مطابق تعلیمی کانفرنسوں کے انعقاد کے مقاصد پر تفصیلی روشنی ڈالی۔ اساتذہ کے لئے تعلیمی لوازمات کا استعمال اور ان کو درپیش مسائل کے تدارک کے لیے ریاستی سطحی اردو ادارہ منظم طور سے اختراعی عملی سرگرمیوں کو انجام دے رہا ہے۔ مزید کہا کہ مطالعہ گروپ کو 5 الگ الگ گروہوں میں منقسم کیا گیا اور سب کے ذمہ سونپی گئی ذمہ داریوں پر بھی روشنی ڈالی۔ ان کے بعد مجیب الرحمٰن سر نے پی جی آئی سے متعلق رہنمائی کی، معیار تعلیم اور اسکولوں کو دی جانے والی طبعی سہولیات کے متعلق بیان کیا۔ محسن عبدالمناف سر نے این اے ایس کی تفصیلات بتائی اور اس کی موجودہ صورت حال کے بارے میں بتاکر کون سے اقدامات کیے جانے چاہیے اس کے تحت رہنمائی کی۔ ریاستی مطالعہ گروپ کے رکن ڈاکٹر صابر خان نے تمام نکات کے ایک دوسرے سے مربوط ہونے کو واضح کرتے ہوئے تجزیاتی تفصیلات کو اساتذہ کے سامنے رکھا۔ ان کے بعد عارف سر نے مختصر انداز میں اساتذہ سے مخاطب ہو کر تعلیمی سطح کو تعین کرنے پر زور دیا۔ جلگاؤں ڈی آئی سی پی ڈی کے معاون الطاف علی سر نے پرکشش انداز میں چند ایک واقعات کے حوالوں سے اردو اساتذہ کے ضمیر کو جھنجھوڑ کر اپنے فرائض منصبی انجام دینے کی گذارش کی۔ جامنیر اردو کیندر پرمکھ اسمعیل سر نے حکومت کے ذریعے نئی تعلیمی پالیسی و سرگرمیوں کے تعلق سے رہنمائی کی۔ واضح ہو کہ اس تعلیمی کانفرنس میں طلباء کو انعامات سے بھی نوازا گیا۔ جلگاؤں ضلعی سطح پر منعقدہ تقریری مقابلے میں جامنیر تعلقہ سے ضلع پریشد اردو پرائمری اسکول باکڑی کی طالبہ شیرین عبداللہ شاہ نے دوم مقام حاصل کیا تھا اسے بھی مہمانان خصوصی کے ہاتھوں انعامات سے نوازا گیا۔ جامنیر تعلقہ سے پچھلے ہفتے ٹرانسفر ہوئے مشتاق سر کی خدمات کا اعتراف کیا گیا اور ہدیہ خلوص سے ان کو نوازا گیا۔ پروگرام کے دوران نئے تقرر شدہ اساتذہ کرام کا استقبال کیا گیا۔ اردو اساتذہ کی اس تعلیمی کانفرنس کی نظامت کے فرائض مظہر علی سر نے اپنے منفرد والہانہ انداز میں انجام دئے۔ صدارت فرما رہے شبیر سر نے اپنی صدارتی خطاب میں تعلیمی ماحول کو خوشگوار اور دلچسپ بنانے کے تعلق سے اساتذہ کو مخاطب کیا۔ اور اظہار تشکر پر کانفرنس کا اختتام عمل میں آیا۔

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

Leave a Reply

Back to top button
Close
Close