دیوبند

بی ایس پی کو بڑا جھٹکا، ماجد علی آزاد سماج پارٹی میں ہوئے شامل، سیکڑوں کارکنان کے ساتھ دہلی میں چندر شیکھر آزاد نے دلائی پارٹی کی رکنیت

دیوبند،15؍ ستمبر(رضوان سلمانی) بہوجن سماج پارٹی کے سینئر لیڈر اور ضلع پنچایت رکن و سابق ضلع پنچایت چیئرمین کے نمائندہ ماجد علی آج اپنے سیکڑوں ساتھیوںکے ساتھ بہوجن سماج پارٹی کو چھوڑ کر آزاد سماج پارٹی میں شامل ہوگئے ہیں ،دہلی میں واقع پارٹی کے دفتر پر آزاد سماج پارٹی کے قومی صدر چندر شیکھر آزاد نے ماجد علی اور ان کے ساتھیوںکو پارٹی کی رکنیت دلائی۔تفصیل کے مطابق آج ضلع سہارنپور کی سیاست میں بڑا پھیربدل دیکھنے کو ملا ہے، بہوجن سماج پارٹی کے کئی سینئر لیڈران نے آزاد سماج پارٹی کا دامن تھام لیا ،پارٹی کے قومی صدر چندر شیکھر آزاد کے سامنے انہوں نے پارٹی کی رکنیت اختیار کی ،سہارنپور کے سابق ضلع پنچایت چیئرمین کے شوہر ماجد علی ،ضلع پنچایت رکن عمران ملک اپنے سیکڑوں کارکنان کے ساتھ آزاد سماج پارٹی میں شامل ہوگئے ۔ اس موقع پر ماجد علی نے کہاکہ وہ آزاد سماج پارٹی کانشی رام کے قومی صدر چندر شیکھر آزاد کی قیادت میں آزاد سماج پارٹی کانشی رام میں کندھے سے کندھا ملاکر پارٹی کو مضبوط کرنے میں اپنا بھرپور تعاون دینگے، انہوں نے یہ بھی کہاکہ جس پارٹی میں عزت نہیں ہے اس میں رہنے کا کوئی مطلب نہیں ہوتاہے ،اسلئے میں نے بہوجن سماج پارٹی کو الوداع کہہ دیاہے۔

پارٹی جوائن کر نے والے ماجد علی اور ان کے ساتھیوں کا خیر مقدم کرتے ہو ئے بی ایس پی پر بھی نشانہ سادھا اور مایاوتی کا نام لئے بغیر کہا کہ بی ایس پی کے لوگ اگر در پردہ بی جے پی کی حمایت نہ کرتے تو آج سہارنپور کی ضلع پنچائت کے چیرمین کرسی پر بی جے پی کا قبضہ نہ ہو تا ۔ انہوں نے کہا کہ ہماری کو شش تھی کہ جیسے بھی ہو بی جے پی کو ضلع پنچائت کی کرسی پر قبضہ کر نے سے رو کا جا ئے ۔انہوں نے کہا ماجد علی اور ان کے ساتھیوں کے آزاد سماج پارٹی میں آنے سے پارٹی کو طاقت حاصل ہو گی ۔ سیا سی حلقوں میں مانا جا رہا ہیکہ ماجد علی اور ان کے ساتھیوں کے بی ایس پی چھوڑ کر جا نے سے بی ایس پی کو زور کا جھٹکا ذرا آہستہ سے لگا ہے ۔ماجد علی کے بی ایس پی چھوڑے کی خبریں یہاں کی سیاسی فضا میں اس وقت سے تیر رہی تھیں جب بی ایس پی نے ماجد علی کو ضلع پنچائت کے چیر مین کا امیدوا ر نہیں بنا یا تھا ۔سمجھا جا رہا تھا کہ ماجد علی لوکدل یا سماجوادی پارٹی کا دامن تھام سکتے ہیں لیکن انہوں نے دونوں پارٹیوں میں سے کسی کا بھی دامن نہ تھام کر نومولود سیاسی پارٹی آزاد سماج پارٹی کا دامن تھام کر سب کو چو نکا دیا ہے دیکھنا یہ ہیکہ اس آیا رام گیا رام سے سہارنپور ضلع کی سیاست پر کیا اثرات پڑتے ہیں ۔

آزاد سماج پارٹی کے ضلع میڈیا انچارج ٹنکو کپل نے بتایاکہ بہت جلد دیگر سیاسی جماعتوں سے بھی سابق ممبر آف پارلیمنٹ اور سابق اسمبلی ارکان پارٹی میں شامل ہونگے اور 2022ء میں آزاد سماج پارٹی اسمبلی انتخابات میں ہماری پارٹی بہتر کارکردگی کامظاہرہ کرے گی۔واضح ہوکہ 2022ء کے اسمبلی انتخابات کو دیکھتے ہوئے مسلسل لیڈران ریاست میں اپنی پارٹیاں تبدیل کررہے ہیں،سہارنپور ضلع میں بھی پارٹی تبدیل کرنے کو لیکر کافی ہل چل مچی ہوئی ہے۔ اب ماجد علی آزاد سماج پارٹی میں شامل ہوگئے ہیں،جس کے بعد سے کئی اور دیگر لیڈران کے پارٹی بدلنے کی بحث زور پکڑ رہی ہے۔ واضح ہوکہ ماجد علی بہوجن سماج پارٹی کے ضلع میں سینئر لیڈر مانے جاتے ہیں اور انہوں نے 2017ء کے دیوبند اسمبلی حلقہ سے بہوجن سماج پارٹی کے ٹکٹ پر اسمبلی الیکشن لڑ کر دوسری نمبر پر رہے تھے ،وہیں وہ موجودہ وقت میں ضلع پنچایت رکن ہیں،جبکہ گزشتہ ٹرم میں ان کی بیوی ضلع پنچایت سہارنپور کی چیئرمین رہی ہے۔

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

Leave a Reply

متعلقہ خبریں

Back to top button
Close
Close