بین الاقوامی

یو اے ای : شہریت قانون کے خلاف لوگوں نے ہندوستانی سفارتخانہ میں میمورینڈم پیش کیا !

متحدہ عرب امارات (یو اے ای) میں بسے ہندوستانی باشندوں نے متنازعہ شہریت ترمیمی قانون پر فکرمندی ظاہر کرتے ہوئے ہندوستانی سفارت خانہ کو ایک میمورینڈم سونپا ہے جس میں اس قانون کی مخالفت کی گئی ہے۔

متحدہ عرب امارات : یکم جنوری 2019 (ذرائع) متحدہ عرب امارات (یو اے ای) میں بھی شہریت ترمیمی قانون کے خلاف لوگ کھڑے ہوتے نظر آ رہے ہیں۔ وہاں بسے ہندوستانی باشندوں نے متنازعہ شہریت قانون پر فکرمندی ظاہر کرتے ہوئے ہندوستانی سفارتخانہ کو ایک میمورینڈم سونپا ہے جس میں کہا گیا ہے کہ یہ قانون (شہریت ترمیمی قانون) تقسیم کرنے والے سماج کو فروغ دیتا ہے۔ ہندوستان سے تعلق رکھنے والے 30 لوگوں نے گزشتہ اتوار کو ہندوستانی سفارتخانہ میں افسروں سے مل کر شہریت قانون کے خلاف اپنی ناراضگی ظاہر کی۔’لیٹر آف اپوزیشن ٹو سی اے اے‘ کو سونپنے کے بعد ابوظہبی کے باشندہ عبداللہ خان نے گلف نیوز سے بات کرتے ہوئے کہا کہ ’’میں ہندوستان میں اپنے اہل خانہ کے تئیں فکرمند ہوں۔ میں نے انھیں اتر پردیش کے اعظم گڑھ میں فون کرنے کی کوشش کی، لیکن نہیں کر سکا۔ ایسا اس لیے کیونکہ شہریت قانون کو لے کر احتجاجی مظاہرہ کے بعد فون لائنیں اور انٹرنیٹ بند تھا۔‘‘عبداللہ خان کا کہنا ہے کہ ’’یہاں کے ہندوستانی طبقہ نے سماج کو بانٹنے والے قانون کو ختم کرنے کے لیے پرخلوص گزارش کرنے کا فیصلہ کیا ہے، تاکہ سبھی مذاہب کے لوگ پرامن طریقے سے رہ سکیں۔‘‘ ہندوستانی سفارتخانہ کو سونپے گئے خط میں افسروں سے تفریق آمیز، تقسیم کرنے والے اور غیر آئینی قانون کو ختم کرنے کی بھی گزارش کی گئی ہے

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

جواب دیجئے

Back to top button
Close
Close