بین الاقوامی

برازیل کورونا وائرس کا نیا مرکز، 20 ہزار سے زائد ہلاک

لندن ، ۲۲؍ مئی ( آئی این ایس انڈیا ) برازیل میں کووڈ 19 سے متاثرین کی تعداد تین لاکھ سے بھی زیادہ ہوگئی ہے، اس طرح کورونا وائرس سے متاثرہ ملکوں کی فہرست میں امریکا اور روس کے بعد اب وہ تیسرے نمبر پر ہے۔عالمی سطح پر کورونا وائرس سے متاثرین کی تعداد 51 لاکھ سے بھی تجاوز کر گئی ہے جبکہ تین لاکھ 32 ہزار 900 افراد اب تک اس وبا سے ہلاک ہو چکے ہیں۔ اٹلی میں ’سوشل سکیورٹی ایجنسی‘ کے مطابق کورونا وائرس سے ہلاکتوں کی تعداد سرکاری اعداد و شمار سے کہیں زیادہ ہو سکتی ہے۔ عالمی سطح پر امریکا میں تقریبا ًسولہ لاکھ افراد کورونا وائرس سے متاثر ہیں۔ دوسرے نمبر پر روس ہے جہاں تین لاکھ 17 ہزار 554 افراد متاثر ہوئے ہیں۔ برازیل میں تین لاکھ دس ہزار 87 افراد میں کووڈ 19 کی تصدیق ہوچکی ہے جو تیسرے نمبر پر ہے۔

برطانیہ میں دو لاکھ 52 ہزار 246 اور اسپین میں دو لاکھ 33 ہزار 37 افراد اس وائرس سے متاثر ہوئے ہیں۔برازیل میں گزشتہ 24 گھنٹوں میں کورونا وائرس سے ایک ہزار 188 افراد ہلاک ہوئے ہیں اور اس طرح اب تک ملک میں تقریبا ً20 ہزار افراد ہلاک ہوچکے ہیں۔ برازیل میں کووڈ 19 سے تین لاکھ دس ہزار سے بھی زیادہ افراد متاثر ہیں اور اس طرح امریکا اور روس کے بعد اب وہ تیسرے نمبر پر ہے۔ لاطینی امریکی ملکوں میں، جو اب تک قدرے محفوظ تھے، اب کورونا وائرس تیزی سے پھیل رہا ہے۔ چین میں حکام نے کورونا وائرس کے سبب تباہ حال معیشت کی بحالی کے لیے نئے اقدامات کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ کورونا وائرس سے نمٹنے کی غرض سے رواں برس معاشی ترقی کا کوئی ہدف مقرر نہیں کیا جائے گا۔

چینی وزیر اعظم لی کی چیانگ نے پارلیمان سے اپنے خطاب میں کہا کہ کورونا سے لڑائی میں ملک نے اہم کامیابی حاصل کی ہے تاہم ابھی یہ وبا ختم نہیں ہوئی ہے اور ملک کی ترقی کے لیے ابھی بہت کچھ کرنے کی ضرورت ہے۔ چین نے معیشت کی بحالی کے لیے 140 ارب ڈالر کی اضافی رقم خرچ کرنے کا اعلان کیا ہے۔ چین میں دو ماہ کی تاخیر کے بعد پارلیمان کے سالانہ اجلاس کا آغاز ہوگیا ہے جس میں صدر شی جن پنگ سمیت تمام اعلی رہنما شریک ہیں۔ اس اجلاس میں چینی صدر سمیت پہلی دو صفوں میں بیٹھے ارکان نے ماسک نہیں پہن رکھا تھا جبکہ دیگر افراد ماسک پہن کر شریک ہوئے۔ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کا کہنا ہے کہ اب اگر کورونا وائرس کی دوسری لہر بھی آئے تو بھی امریکا کو بند نہیں کیا جائے گا۔ کار بنانے والی معروف امریکی کمپنی فورڈز کے ایک کارخانے کا دورہ کرنے کے دوران انہوں نے کہا کہ ہم آگ کو بجھانے کا کام کریں گے، ملک کو بند نہیں کریں گے۔اس دوران امریکا کی سبھی پچاس ریاستوں میں نافذ لاک ڈاؤن میں کافی نرمی کی گئی ہے۔

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

جواب دیجئے

Back to top button
Close
Close