بین الاقوامی

معروف شاعرافروزعالم کے اعزاز میں شعری نشست

ریاض : گزشتہ ٣٠جنوری کوادبی تنظیم ”ادارہ سب رنگ ،،ریاض کے زیر اہتمام عالمی شہرت یافتہ اور خلیج کے انتہائی مقبول شاعر افروز عالم کے اعزاز میں ریاض کے معروف شاعر اور حفیظ بنارسی کے صاحبزادے ظفر محمود کے دولت کدہ پر ایک شعری نشست کا اہتمام کیا گیا؛جس کی صدارت معزز مہمان افروز عالم نے کی جبکہ نظامت کے فرائض منصور قاسمی نے انجام دیئے ۔مہمان شاعر کا تعارف کراتے ہوئے ظفر محمود نے کہا: افروز عالم نے شعر و ادب سے ایک عہد کو متاثر کیا ہے ،اقوامی اور بین الاقوامی مشاعرے میں شرکت کرتے رہتے ہیں، فصل تازہ، الفاظ کے سائے ،دھوپ کے عالم میں ،کے علاوہ کویت میں ادبی پیش رفت جیسی دستاویزی کتابوں کے خالق ہیں ، ہمارے لئے یہ اعزاز کی بات ہے کہ آج افروز عالم صاحب ہمارے درمیان موجود ہیں ۔
نشست کا آغاز منصور قاسمی نے اپنی نعت پاک سے کیا ، شعراء کرام نے رومانی ، معاشرتی اور اصلاحی غزلوں کے علاوہ احتجاجی غزلوں سے خو ب داد و تحسین وصول کی ، پیش ہیں منتخب اشعار ۔
ہیں بضد حکمراں این آر سی لانے کے لئے
پھر سے زنجیر غلامی میں پھنسانے کے لئے
فیضان اعظمی
سازشیں بنیاد کے پتھر اٹھا کر لے گئیں
نفرتوں نے اس قدر توڑا کہ ملباہو گئے
حسان عارفی
ایک ہی فرد پہ ہوتا نہیں بارش کا اثر
جب چھتیں گھر کی ٹپکتی ہیں تو سب جاگتے ہیں
سہیل اقبال
وہ انا کے سلاسل میں جکڑے رہے
ہم نے ضد چھوڑ دی دوستی کے لئے
منصور قاسمی
تمہارے فیصلے، قانون ہم کو کیا ڈرائیں گے
کفن ہم باندھ کر سر پہ نکل آئے ہیں میداں میں
نور جمشیدپوری
دھوپ نے پگھلا دیئے سارے کھلونے موم کے
خوبصورت سب کھلونے مجھ کو یاد آئے بہت
ظفر محمود
یہ سوکھے پیڑوں کے زرد پتے میری تباہی پہ ہنس رہے ہیں
انہیں خبر کیا کہ رفتہ رفتہ سمے کا سورج پگھل رہا ہے
دیر تک چاندنی ساحل پہ تھی، افسوس
میں وہیں جھیل پہ ہوتا تو سخنور ہوتا
افروزعالم
دیر شب تک چلنی والی یہ نشست ظفر محمود کے شکریہ کے ساتھ اختتام پذیر ہوئی ۔

مزید پڑھیں

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

متعلقہ خبریں

جواب دیجئے

Back to top button
Close
Close