عجیب و غریب

کسان صلاح کار کے خلاف تھانہ کوواکول میں مقدمہ درج

 قحط سالی کے فائدے کے لئے دو کسان صلاح کاروں کو کسانوں سے غیر قانونی وصولی کر رہے ہیں

 نوادہ ( محمد سلطان اختر ہندوستان اردو ٹائمز )  نوادہ ضلع کے کوواکول بلاک نے ایک بار پھر کسانوں کے صلاح کار کو بے نقاب کردیا۔ کسان صلاح کار نے کسانوں کی مدد کرنے کے بجائے معمولی عذر پیش کرکے کسانوں کی جیبیں لوٹنے میں کوئی کسر نہیں چھوڑ رہے ہیں۔  کسان صلاح کار کے خلاف کوواکول پولیس اسٹیشن میں مقدمہ درج کیا گیا ہے۔  قحط سالی سے متعلق فوائد کے لئے فارم جمع کروانے کے بدلے دو کسان صلاح کار پر کاشتکاروں سے رقم کی وصولی کا الزام لگایا گیا ہے۔  کسان اس خوف سے پیسہ دینے پر مجبور ہے کہ ایک چھوٹا سا بہانہ بنا کر اس کا پیسہ نہیں روک نہ دے ۔  کیس کے اندراج کے بعد پولیس نے اس معاملے میں تفتیش شروع کردی ہے۔
 بتایا جارہا ہے کہ یکم دسمبر کو کوواکول بلاک ہیڈ کوارٹر کسان بھون میں قحط سالی سے متعلق فوائد کے لئے فارم جمع کیا جارہا تھا۔  اس دوران کوواکول کے کسان صلاح کار سچن کمار اور پہاڑ پور کے کسان صلاح کار رنجن کمار کسانوں سے قحط سالی فارم کو بھرنے کے بدلے 200 سو روپے کی وصولی کر رہے تھے۔  اسی وقت  کسی نے ویڈیو بنائی اور وائرل ہوگیا۔
 ویڈیو کو سوشل میڈیا پر تیزی سے وائرل ہوتے ہوئے اور اس معاملے کو پکڑتے ہوئے دیکھتے ہی دیکھتے ، ڈسٹرکٹ ایگریکلچر آفیسر اور کوواکول بی ڈی او سنجیو کمار نے تفتیش کی ہدایت پر کواکول پولیس تھانہ بی اے او راجیش جھا نے منگل کو تھانہ کو ایک خط بھیجا تاکہ ان دونوں کسان صلاح کار پر کارروائی   عمل میں لایا جائے۔
 جس کے بعد تھانہ صدر نے دونوں کسان صلاح کاروں کے خلاف ایف آئی آر درج کرلی ہے۔  تھانہ انچارج نے بتایا ہے کہ پرائمری درج کرکے تفتیش شروع کردی گئی ہے۔  اس وقت دونوں ملزم پولیس کی گرفت سے باہر ہیں۔  اس کی گرفتاری کے لئے چھاپے ماری کی جارہی ہے۔۔

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

متعلقہ خبریں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close