پٹنہ

بہار: گالی گلوج کرنے پر گاؤں کے 5 نوجوانوں کو گاؤں بدرکردیا گیا

پٹنہ؍ سارن،یکم جون (ہندوستان اردو ٹائمز) بہارکے سارن ضلع کی ایک گرام پنچایت نے ایک مخصوص ذات کے خلاف بدزبانی کرنے پر پانچ نوجوانوں کو 11 ماہ کے لیے گاؤں سے نکال دیا ہے۔ جب ان نوجوانوں کو قصوروار پایا گیا تو پنچایت ممبران نے ان کے سروں پر جوتے رکھوایا اور گاؤں میں چکر لگوایا۔ پھر انہیں 11 ماہ تک گاؤں سے باہر رہنے کا حکم دیا۔

یہ واقعہ گذشتہ ماہ 31 مئی 2022 کو گرکھا تھانہ علاقے کے مٹھے پور پنچایت میں پیش آیا ہے۔ جہاں ایک خاص ذات کا غلبہ ہے اور پنچایت ممبران بھی اسی سے تعلق رکھتے ہیں۔کچھ دن پہلے فیس بک پر لائیو آنے کے بعد نوجوانوں پر ذات پات پر مبنی بدسلوکی کا الزام لگایا گیا ہے۔

رابطہ کرنے پر گرکھا تھانے کے ایس ایچ او آر ایس راوت نے کہا کہ ہم نے نوجوانوں کے اہل خانہ کے بیانات ریکارڈ کرنے کے لیے پولیس کو گاؤں بھیج دیا ہے۔سوشل میڈیا پر وائرل ہونے والی ویڈیو کی بنیاد پر ایف آئی آر بھی درج کی گئی ہے، اس سلسلے میں فی الحال تفتیش جاری ہے۔

ہماری یوٹیوب ویڈیوز

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button