بہار و سیمانچل

بہار میں دستاویز کی تصحیح کے لیے قطاروں میں عوام ایک طبقے کے ساتھ بھید بھائو کا الزام، انتظامیہ سے کارروائی کا مطالبہ

کٹیہار ۔۳۱؍جنوری: (احمد حسین قاسمی) کٹیہار کے مختلف علاقے خصوصا اعظم نگر بلاک میں سی اے اے این آرسی این پی آر کی دہشت سے لوگ حیران وپریشان ہیں اور اپنے اپنے کاغذات بلکہ آبااجداد کے دستاویز کی تصحیح اور سدھار کے لیےسرکاری دفاتر کے چکر لگا رہے ہیں دن تو دن ہیں سرد راتوں میں بھی غریب طبقہ لمبی لمبی لائنوں میں لگنے پر مجبور ہیں کیونکہ غریب نا خواندہ ہوتے ہیں عام طور پر نہ تو انکے مکمل طور پر مطلوبہ دستاویز ہوتے ہیں اور نہ ہی جو دستاویز ہیں“ مکمل طور پر نام وپتہ سب میں یکساں ہیں بلکہ کچھ غلطیاں انکے غربت کی ہیں اور کچھ مہربانیاں ہیں حکومتی افسران کی ،جس پربنا پرلوگ اپنی شہریت کے چھن جانے کے خوف سے بہت گھبرائےہوئے اور پریشان ہیں اور حکومت سے مانگ ہے کہ بلاک میں افسران کی تعداد بڑھائی جائے تاکہ لوگوں کو دشواری نہ ہو اور لمبی لمبی لائنوں سے نجات ملے اور بہت سارے حکومتی افسران رشوت لیے بغیر کام نہیں کررہے ہیں،اور ایک طبقے کے ساتھ بھید بھائو کیا جارہاہے، انکےخلاف سخت کاروائی کی مانگ کی گئی ہے ۔

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

جواب دیجئے

Back to top button
Close
Close