بہار و سیمانچل

گیا: ہولیکا دہن میں 3 بچوں نے دی جان کی’ آہوتی‘ ، تینوں ہلاک

گیا؍پٹنہ، 29مارچ ( آئی این ایس انڈیا ) گیا ضلع کے بودھ گیا بلاک میں کے راہل نگر گاؤں میں ہولیکا میں جل کر تین بچے ہلاک ہوگئے۔ اس واقعے کے بعد اتوار کی رات سے ہی پوری پنچایت میں سوگواری ہے۔ مقتول بچوں کی آخری رسومات ادا کر دی گئیں۔ واقعے کے بعد نہ تو کسی بچے کا پوسٹ مارٹم کروایا گیا، اور نہ ہی پولیس کو اطلاع دی۔اتوار کی شام ہولی اور ہولیکا دہن کو لے کر گاؤں کے لوگوں میں جوش تھا، گاؤں کے لوگ گھر چھوڑکر ہولیکا دہن کے مقام پرپہنچ گئے ، اسی دوران کلیشور مانجھی کا بیٹا روہت ، بابو لال ولد نندلال مانجھی اور پنٹو مانجھی کا بیٹا اپیندر مانجھی اپنے اپنے گھرسے ہولیکا دہن میں آہوتی دینے کے لئے پہنچے۔لیکن گاؤں والوں کی غفلت کی وجہ سے ہولیکا دہن کی گئی ، ہولیکا کی لپٹیں بلند ہونے لگیں ، اور تینوں بچے اس کی لپیٹوں کی زد میں آگئے ۔بچے بچاؤ کیلئے پکار رہے تھے ، لیکن گاؤں کے لوگ ہولیکا دہن اور ’’ہولی ہے ‘‘کے جوش میں اس چیخ و پکار پر کان نہیں دھرا ۔بعد میں کچھ لوگوں کی نظر ہولیکا کی آگ میں تڑپتے بچوں پر نظر گئی۔ پھر گاؤں والوں نے تینوں بچوں کو آگ سے نکالا، لیکن تب تک بہت دیر ہوچکی تھی، تینوں بچے زخموں کی تاب نہ لاکر ہلاک ہوگئے ۔جب تین بچوں کی ہلاکت کی خبر اہل خانہ تک پہنچی تو چیخ و پکار مچ گئی ، اور گھروں میں صف ماتم بچھ گئی۔ رات بھر گائوں میں رونے اور چیخنے کی آواز گونجتی رہی ، لیکن انتظامیہ کی ٹیم موقع پر کہیں نہیں پہنچی۔ تاہم انتظامیہ کا دعویٰ ہے کہ ضلع میں 298 مقامات پر مجسٹریٹ اور پولیس دستے تعینات تھے۔ پولیس اور انتظامیہ کو پیر کی صبح آٹھ بجے اس حادثہ کے بارے میں معلوم ہوا، اس وقت تک تینوں بچوں کی لاشوں کا پوسٹ مارٹم کئے بغیر انتم سنسکار کردیا گیا تھا ۔

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

Leave a Reply

Back to top button
Close
Close