بہار و سیمانچل

مظفرپور: انصاف منچ سکرہ بلاک سطح کی کنوینگ کمیٹی تشکیل ، مودی حکومت کسانوں کی نہیں سرمایہ داروں کی خیر خواہ :اسلم رحمانی

مظفرپور:03/جنوری (پریس ریلیز ) انصاف منچ بہار نے ضلع کے سکرہ بلاک سطح کی ایک نشست کا انعقاد شُجاول پور گاؤں میں منعقد کیا۔ نشست کی صدارت معروف سماجی رہنما شادب الحسن نے کی، اس موقع پر بلاک سطح کی ایک کنونیگ کمیٹی کی تشکیل ہوئی ۔ ذیشان احمد کو کنوئینر ،محمد وجیہ الحسن اور رضاالدین کو معاون کنوئینر بناگیا۔ نشست میں مہمان خصوصی کے طور پر انصاف منچ کے ضلعی صدر فہد زماں، خازن اعجاز احمد عرف ببلو، آئیسا کے رہنما روشن کمار موجود تھے۔ شرکاء میں محمد عاطف،محمد صدام،محمد سالک ،راجیش رنجن وغیرہ موجود تھے۔اس موقع پر انصاف منچ بہار کے ریاستی ترجمان اسلم رحمانی نے اپنے افتتاحی خطاب میں مودی حکومت کو آڑے ہاتھ لیا ہے۔اسلم رحمانی نے کہا ہے کہ مودی سرکار کسانوں کے مفادات کی باتیں کر کے محض دکھاوا کرتی ہے، لیکن حقیقت میں وہ سرمایہ داروں کی خیرخواہ ہے اور اسی وجہ سے اس نے صنعتکاروں کا کھربوں روپے کا قرض معاف کیا ہے۔انہوں نے مذید کہا ’’23 کھرب 78 ارب 76 کروڑ روپے کا قرض اس سال مودی حکومت نے کچھ صنعتکاروں کا معاف کیا۔ اس رقم سے کووڈ کے مشکل وقت میں 11 کروڑ کنبوں کو 20- 20 ہزار روپے دیئے جاسکتے تھے۔ مودی سرکار کوصنعتکاروں کے لئے کام کرنے والی مشینری قرار دیتے ہوئے اسلم رحمانی اس پر مسلسل حملہ کرتے ہوئے کہتے ہیں کہ اسے عام لوگوں اور کسانوں سے زیادہ اپنے چند سرمایہ دار دوستوں کی فکر ہوتی ہے اور ان کے حق میں بار بار فیصلے لیتی ہے۔ انصاف منچ کے ریاستی صدر سورج کمار سنگھ نے اپنے خصوصی خطاب میں بی جے پی کے زیر اقتدار ریاستوں میں ’’لوجہاد‘‘ کے نام پر بننے والے قانون پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ اس طرح کا قانون نافذ کرنا انسانی حقوق کی خلاف ورزی ہے۔ انہوں نے کہا کہ جہاں محبت ہے وہاں جہاد نہیں ہوتا ہے۔ محبت ایک بہت ذاتی حق ہے اور اس میں دخل اندازی نہیں کی جاسکتی ہے۔ لو جہاد کے نام پر قانون سازی تشویشناک ہیں۔ یہ انسانی آزادی میں مداخلت کرتا ہے۔ زندگی کے حق کو بنیادی حق تسلیم کیا گیا ہے لیکن اس قانون کے نتیجے میں انسانی حقوق کی پامالی کی جارہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ کوئی بھی شخص اپنا مذہب تبدیل کرسکتا ہے ، اس کی آئین نے ضمانت دی ہے ہے۔ لہذا لو جہاد قانون غیر آئینی ہے ۔

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

متعلقہ خبریں

Back to top button
Close
Close