بہار و سیمانچل

پہلی بار پڑھی گئی لاک ڈاؤن کے سائے میں نماز عید الفطر : مہجورؔالقادری

نوادہ (پریس ریلیز)‌ پوری دنیا اس وقت جن حالات سے دوچار ہے اس سے ہر کس و ناکس حیران و پریشان ہے کورونا وائرس کی شکل میں یہ عالمی وباء عذابِ الٰہی ہے جس کے سامنے بڑے بڑے سورما بھی گھٹنے ٹیک چکے ہیں جسے اپنی طاقت و اقتدار پہ بڑا ناز تھا وہ ایک معمولی وائرس کے سامنے بے بس نظر آرہے ہیں ساری دنیا مل کر بھی آج تک اس وائرس کا مقابلہ نہیں کرسکی اب تو دن بہ دن حالات اور بھی ناگفتہ بہ ہوتے جارہےہیں حکومتوں کی ساری تدبیریں ناکام ثابت ہوتی جارہی ہیں اسی لاک ڈاؤن کے سائے تلے پوری دنیا سمیت بہار میں بھی عیدالفطر کی نماز گھروں میں بہ شکل نفل نماز ادا کی گئی نوادہ ضلع کی بھی ساری مسجدیں اور عید گاہیں سنسان نظر آئیں اور سارے مسلمانوں نے اپنےاپنے گھروں میں نماز چاشت یا شکرانے کی نماز ادا کی نوادہ کی سڑکیں بھی ویران نظر آئیں عیدالفطر کے موقع پر گلی کوچوں اور سڑکوں پہ جو میلے لگا کرتے تھے سب نابود دکھائی دیئے جس سے خاص کر بچوں میں اُداسی نظر آئی شہر نوادہ کے تمام ائمہ و علماء نے حکومت کی ہدایات کا مکمل خیال کیا اور لاک ڈاؤن و سوشل ڈسٹینسنگ کے قوانین پہ پوری قوم کو عمل کرواکے ضلع انتظامیہ کا بھر پور تعاون کیا اس سلسلے میں تنظیم عُلمائےحق، دارالعلوم فیض الباری ،مجلسُ العلماءوالاُمّہ ،دارالقرآن مدرسہ عظمتیہ اور مدرسہ عزیزیہ نوادہ کا اہم رول رہا بہت ہی سکون و شانتی کے عید الفطر کا تہوار منایا گیا اور لوگوں نے ایک دوسرے کو سوشل میڈیا کے توسط سے مبارک باد دیا مذکورہ خیالات کا اظہار تنظیم عُلمائےحق اور بہاراسٹیٹ اردوٹیچرس ایسوسی ایشن ضلع نوادہ کے صدر مولانا محمدجہانگیرعالم مہجورالقادری نے کیا

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

متعلقہ خبریں

جواب دیجئے

Back to top button
Close
Close