بہار و سیمانچل

ڈاکٹروں نے بی جے پی ایم ایل اے کے خلاف مقدمہ درج کرایا : بدسلوکی پرطبی عملے کا احتجاج ، صدر اسپتال کی او پی ڈی سروس بند

چھپرہ 7مئی(آئی این ایس انڈیا) بی جے پی پورے ملک میں کوروناسے لڑنے و الوں کے وقاراوران کی تعظیم کی بات کرتی رہی ہے۔اترپردیش کی سرکارنے قانون بھی پاس کررکھاہے۔دیش بھکتی کاسبق خوب سکھایاجارہاہے ، لیکن یہ سبق سیکھنے کواس کے لیڈرہی تیارنہیں ہیں۔پارٹی کی نصیحت پران کے لیڈران کی ہی توجہ نہیں ہے۔بہارکے ضلع سارن کے چھپرہ صدر اسپتال کے ڈاکٹروں نے بی جے پی ممبر اسمبلی شتروگھن تیواری کے خلاف مقدمہ درج کیاہے۔ڈاکٹروں نے صدر اسپتال کی او پی ڈی سروس بند کردی ہے۔ ایم ایل اے شتروگھن تیواری بدھ کی شام ایک مریض سے ملنے چھپرہ صدراسپتال پہنچے۔

ڈیوٹی پرموجود ڈاکٹر راکیش کمار سے ان کا تنازعہ تھا۔ جس کے بعد ایم ایل اے کوڈاکٹرپرغصہ آگیا۔واقعے کی اطلاع ملتے ہی صدر سب ڈویژنل پولیس آفیسراجے کمارسنگھ اسپتال پہنچے اور معاملے کی جانچ کی۔ ڈاکٹروں نے سرن کے ضلعی مجسٹریٹ سبرت کمار سین کو بھی واقعے سے آگاہ کیا۔ایم ایل اے شتروگھن تیواری نے کہاہے کہ میں ڈاکٹر راکیش کمار سے کسی مریض کے بارے میں معلومات حاصل کرنے کی کوشش کر رہا تھا ، لیکن ڈاکٹر نے صحیح معلومات نہیں دی۔ مجھ پر لگائے گئے الزامات بے بنیادہیں۔ ادھر ، صدر اسپتال کے ڈاکٹروں نے تھانے میں ایم ایل اے کے خلاف ایف آئی آر درج کروائی ہے۔ ڈاکٹروں نے اسپتال کی اوپی ڈی سروس بند کردی ہے۔ ایمبولینس سروس ڈرائیوروں نے بھی کام کابائیکاٹ کیا ہے۔

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

متعلقہ خبریں

Back to top button
Close
Close