بہار و سیمانچل

بنڈلہ باغ نوادہ کا چونتیسواں دن غیر مدت معینہ احتجاج تسلسل کے ساتھ جاری

نوادہ ( محمد سلطان اختر)‌ نوادہ ضلع کے تحت بندیلا باغ میں تسلسل کے ساتھ غیر معینہ مدت احتجاج جاری ہے، جس کا آج 34واں دن ہے،یہ احتجاجی مظاہرہ جنتا فاؤنڈیشن کے ماتحت چل رہا ہے، آج دھرنا مخصوص ترجمانوں نے خطاب کیا، دھرنے خطاب کرتے ہوئے،روہیت سینہا اور حسان احمد علی گڑھ نے اپنی اپنی باتیں باری باری رکھی اور کہا کہ سی اے اے این آر سی اور این پی آر جیسا کالا قانون ملک کو تقسیم کرنے والا ہے، آپسی بھائی چارہ آپسی میل و محبت کو ختم کرنے والا ہے، اس قانون کے ذریعے مودی حکومت نےآپسی بھائی چارے میں اک نفرت کی دیوار کھڑی کر دی ہے، جس طرح سے بھارت کی عوام سوچنے پر مجبور ہے، بنڈلہ باغ احتجاجی مظاہرہ 8رکنی ٹیم کے ذریعے چل رہا ہے، اس ٹیم کے سربراہ ندیم حیات ہیں، اور اس ٹیم کا نام جنتا فاؤنڈیشن بنڈلہ باغ نواده ہے، آج ضلع کے بنڈلہ باغ میں پلوامہ کے شہیدوں کو یاد کیا گیا، اور ان شہداء کے نام تعریفی کلمات کہے گئے، موم بتی جلا کر خاموشی کے کچھ لمحے رہ کر خراج عقیدت پیش کیا گیا، آج کی خاص وجہ یہ رہی کہ یہاں کے احتجاج میں وکلاء نے اپنا نام درج کروایا، یہاں کے وکلاء کا کہنا ہے کہ ملک سے لیکر غیر ممالک سمیت چاروں طرف اس کی مخالفت ہو رہی ہے لیکن حکومت گونگی بہری بنی ہوئی ہے، جتنا جلدی ہو اس کالے قانون کو واپس لے، وکلاء کی ایک اچھی خاصی جماعت بندیلا باغ میں آکر اپنا احتجاج درج کیا، اس وکلا کی جماعت میں ندیم حیات، محمد رقیب،عجمہ نسیم،وشو جیت بھارتی، وغیرہ وکلاء نے خطاب کیا،اس موقع پر ہزاروں ہزار کی تعداد میں مرد اور خواتین بچے بوڑھے موجود تھے،

مزید پڑھیں

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

متعلقہ خبریں

جواب دیجئے

Back to top button
Close
Close