بہار و سیمانچل

سی پی آئی ایم ایل کسی بھی حالت میں آر ایس کے ایس ایجنڈہ کو ملک میں لاگو ہونے نہیں دےگی : آفتاب عالم

سی اےاے این آر سی اور این پی آر کےخلاف سی پی آئی ایم ایل نے جن ایکتا سمیلن کا کیاانعقاد

مظفرپور : 10فروری 2020 (پریس ریلیز) سی اےاے این آر سی اور این پی آر کےخلاف جن ایکتا مہم کے تحت سی پی آئی ایم ایل پارٹی نے مظفرپور ضلع کے مادھو پور ہارٹ کے نزد واقع ایک میدان میں جن ایکتا سمیلن کاانعقاد کیا اس موقع پرانصاف منچ بہار کے ریاستی نائب صدر آفتاب عالم نے کہا کہ بھاجپا چاہتی ہے کہ آر ایس ایس کے ایجنڈہ کو ملک میں لاگو کریں جو ناممکن ہے۔ ملک کی عوام جاگ چکی ہے اس لئے کسی بھی حالت میں آرایس ایس کے ایجنڈہ کو ملک کی عوام ملک میں لاگو ہونے نہیں دے گی۔ انہوں نے کہا کہ بہار کے وزیر اعلی نتیش کمار سی اےاے کی حمایت کرنے کےبعد کہہ رہے ہیں کی بہار میں این آر سی نافذ نہیں ہوگا لیکن دوسری جانب این آر سی کی پہلی سیڑھی این پی آر کی تیاری میں مصروف ہیں لیکن انہیں کامیابی نہیں ملےگی اس لیے سی پی آئی ایم ایل اور انصاف منچ نے نتیش کمار کی جھوٹ کاقلعی کھلونے اور سی اےاے این آر سی اور این پی کے خلاف بہار اسلمبی سے قرارداد پاس کرانے کے لیے 25 فروری کو اسمبلی مارچ کرنے کا اعلان کیاہے جس میں پورے بہار سے لاکھوں کی تعداد میں لوگ شامل ہوں گے وہیں سی پی آئی ایم ایل ریاستی کمیٹی کے رکن سترودھن سہنی نے بھی بھاجپا پر جم کر نشانہ سادھتے ہوئے کہا کہ ملک کی عوام بھاجپا کی سازش کو سمجھ چکے ہیں اس لئے ان کے کسی بھی جھانسے میں نہیں آنے والے ہیں۔ یہ لوگ پولیس اور بجرنگ دل، آرایس ایس کے غنڈوں کا سہارا لیکر آندولن کاریوں پر حملہ کروارہے ہیں۔ یہ لوگ ڈر چکے ہیں یہی وجہ ہے کہ انہیں کرسی جانے کا غم ستارہا ہے۔ ملک کی عوام آرایس ایس کے کسی بھی ناپاک منشا کو کامیاب نہیں ہونے دے گی۔ وہیں پرشورام پاٹھک نے ملک میں جاری ستیہ گرہ میں خواتین اور مردو نوجوانوں کی بھیڑ اور حمت و حوصلہ کی تعریف کرتے ہوئے کہا کہ یقینا ہم اس لڑائی کو جیتیں گے اور جو لوگ اس لڑائی میں ساتھ نہیں آرہے ہیں ان سے اپیل کرتے ہوئے کہا کہ یہ لڑائی سبھوں کی ہے اتحاد کے ساتھ اس لڑائی کو انجام تک لڑنے کی ضرورت ہے۔ سبھی لوگوں کو اپنے اپنے گھروں سے نکلنا ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ کچھ لوگ غلط فہمی میں ہیں کہ یہ لڑائی صرف جو لوگ ستیہ گرہ پر بیٹھے ہیں ان کی ہے ایسا ہرگز نہیں ہے یہ کالاقانون سبھوں کے لئے نقصاندہ ہے اس بات کو سمجھنے کی ضرورت ہے۔ اپنے اپنے گھروں سے لوگوں کو نکلنے کی اپیل کرتے ہوئے کہا کہ شاہین باغ ستیہ گرہ کی آواز کا نتیجہ ہے کہ آج پورے ملک کے کونے کونے، گلی محلے میں لوگ اس کالے قانون کے خلاف ستیہ گرہ پر بیٹھ گئے ہیں۔ یہی وجہ ہے کہ حکومت بہار اور مرکز کی حکومت کی نیند اُڑ چکی ہے۔ انیل پاسوان نے کہا کہ امیت شاہ اور مودی کا ڈر اس بات کا ثبوت ہے کہ جھارکھنڈ انتخاب کے بعد دہلی انتخاب بھی ہاررہے ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ ایک وزیرداخلہ کی زبان سے یہ کہنا کہ اتنی زور سے ای وی ایم کا بٹن دباؤ کہ شاہین باغ تک کرینٹ پہنچے یہ اُن کا ڈر بتارہا ہے۔ ایک شاہین باغ سے وہ کتنا ڈرگئے ہیں جب کہ پورا ملک شاہین باغ بن چکا ہے۔وہیں انصاف منچ بہار کے ریاستی ترجمان اسلم رحمانی نے بہار کے وزیراعلیٰ نتیش کمار کے فرضی سوشان پر حملہ بولتے ہوئے کہا کہ ہریالی یاترا پر اپنے کاموں کی گنتی گنوانے والے مکھیا سی اےاے کی حمایت کرنے کے بعد کہتے ہیں کہ بہار میں این آر سی کاسوال ہی پیدا نہیں ہوتاہے لیکن نتیش کمار دوسری جانب این پی آر کی تیاری شروع کردیے ہیں لیکن بہار کی عوام نے ان سیاہ قوانین کے خلاف فیصلہ کن جنگ لڑنے کافیصلہ کرلی ہے آخری سانس تک جنگ جاری رہےگی سمیلن کی صدارت براکت نے کی اور نظامت نورعالم نے کیا وہیں اس موقع پر انصاف منچ مظفرپور کے ضلعی صدر فہد زماں، سی پی آئی ایم ایل مظفرپور کے ضلعی کمیٹی کےرکن ہوریل رائے،محمد سہیل،عبدالوارث،خورشید عالم،ماسٹر شاہ عالم،سلطان علی، نے بھی خطاب کیا وہیں جامعہ عبدالباری نسواں کی ایک طالبہ صفیہ یوسف نے این آر سی این پی آر اور سی اےاے کے خلاف پر مغز تقریر پیش کی

مزید پڑھیں

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

متعلقہ خبریں

جواب دیجئے

Back to top button
Close
Close