بہار و سیمانچل

سیکنڈ شاہین باغ آڑھا میں غیر معینہ مدت مظاہرہ کا آج دسواں دن!

جموئی ( محمد سلطان اختر )‌جموئی ضلعے کے تحت آڑھا گاؤں میں غیر معینہ مدت کی کارکردگی میں روز بروز اضافہ ہورہا ہے۔ لوگوں مرکزی اور ریاستی حکومت کے تئیں سخت غم و غصہ پایا جارہا ہے لوگ بہت پرجوش طریقے سے احتجاج کر رہے ہیں۔ مرکزی حکومت سے لے کر نتیش حکومت تک کے خلاف لوگوں میں کافی ناراضگی پایا جارہا ہے، مردوں کی بنسبت خواتین کی تعداد زیادہ تھی۔ آج کے مرکزی ترجمان گووند بھارتی ، انوکی سنگھ ، اور ڈاکٹر دنیش سنگھ ضلعی صدر تھے۔ انہوں نے اپنی تقریر میں کہا کہ یہ لڑائی بہت طویل ہے ہر روز مرکزی حکومت ایک نیا قانون لا کر مسلمانوں اور دلتوں کو ہراساں کررہی ہے ، دہلی انتخابات کے بعد اس طرح کا سیاہ قانون لانے جارہی ہے جو اس سے بھی زیادہ خطرناک ہے۔ جس کے تحت مسلمان بہت زیادہ پریشان ہوں گے اور انہیں ہندوستان سے باہر نکالنا آسان ہوجائے گا۔ آج دو لڑکیوں نے بھی این آر سی کے لئے اپنی توٹلاتی زبان میں لوگوں کے سامنے ہوئی، جس میں دو نو عمر لڑکیاں عزیفہ ناز اور لیبا شہزادی نے کہا کہ یہ قانون بھارت میں چلنے والا نہیں یہ ہٹلر والا قانون ہے،آڑھا مظاہرہ کی کمیٹی میں 7 رکنی ٹیم کے ذریعے چل رہا ہے اس کے تمام ممبران حوصلے اور جذبے کے ساتھ لگے ہوئے ہیں،آنے والے مہمانوں کا پرتپاک استقبال کرتے ہیں،اس کمیٹی کی سربراہ مفتی عبداللہ ظہیر ہیں۔ کمیٹی کے سربراہ نے کہا کہ ہم اپنے آنے والے مہمانوں کا خیرمقدم کرتے ہیں۔ لہذا دور دراز سے آنے والے لوگوں کے لئے کھانے پینے کا انتظام رہتا ہے۔ جو آڑھا کا اخلاقی کردار ہے۔ اس موقع پر مختلف گاؤں اور علاقوں سے ہزاروں عورتیں اور مرد حضرات موجود تھے۔

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

Leave a Reply

متعلقہ خبریں

Back to top button
Close
Close