بہار و سیمانچل

بہار : سہرسہ کے رانی باغ میں شاہین باغ اورسبزی باغ جیساانقلابی ماحول

پپویادو کی شرکت کےبعدخواتین اورنوجوانوں نےمورچہ سنبھال کرمودی حکومت کوللکارا،قانون واپس نہ ہونےتک دھرناجاری رکھنےکااعلان

سہرسہ،٢٢جنوری(وجیہ احمدتصور) سمری بختیارپورسب ڈویزن کےرانی باغ میں کل سے شروع ہوئےاحتجاجی دھرناکے دوسرے دن بڑی تعداد میں مرداورعورتوں نے شرکت کرکے این آر سی، سی اے اے اور این آر پی کے خلاف اپنے جذبات کا اظہار کیا. اس موقع پر مختلف سیاسی، سماجی اور ثقافتی تنظیموں کے نمائندوں نے بھی شرکت کی اور ملک کو درپیش مسائل پر تفصیلی بات کرتے ہوئے کہا کہ ملک آج اقتصادی، معاشی بحران کا شکار ہے اور اسی بحران اور ملک کے حالات سے لوگوں کا دھیان ہٹانے کے لئے یہ کالا قانون ملک میں تھوپنے کی کوشش ہے.
آج کے دھرنے کےخاص مقرر اورسابق ممبرپارلیمنٹ راجیش رنجن عرف پپو یادو نےمرکزی حکومت کے رویہ پر سخت تنقید کرتے ہوئے کہا کہ مودی اور شاہ ملک کو گہرے کنویں میں ڈھکیل رہے ہیں. انہوں نے کہا کہ بھارت گنگا جمنی سنسکرتی کا وہ انوکھا سنگم ہے جہاں کی سنسکرتی لنگی اور گنجی ہے جسے ہندو اور مسلمان سبھی پہنتے ہیں مگر ہمارے وزیراعظم اس میں بھی ہندو اور مسلمان ڈھونڈ لیتے ہیں. انہوں نے کہا کہ کہ ملک سے محبت کرنے والوں کا ڈی این اے ٹیسٹ کرا لیجئے اگر ہمارا ڈی این اے بھارت کا ہے تو آپ پھر ہم سے کوئی سرٹیفکیٹ مانگنا بند کر دیجئے. ہم اسی مٹی کے ہیں اور یہ مسلمان جو حضرت محمد کے امن کے راستے پر چلنے اور حضرت حسین کے قربانی کا جذبہ رکھنے والے وطن کے لئے اپنی جان نچھاور کو تیار رہتے ہیں.
آج کے دھرنے کی اہم بات چودھری سیف صلاح الدین کا دھرنے میں پہنچ کر اعلان کرنا کہ جب تک دھرنا چلے گا وہ اس میں شامل رہیں گے اور انہوں نے اس قانون کی کھل کر مذمت کرتے ہوئے کہا کہ اس لڑائی میں وہ آپ کے ساتھ ہیں.
آج کےدھرنےکی نظامت کےفرائض سید ہلال اشرف اور شاہنوازبدرقاسمی نےمشترکہ طورپر انجام دئے جبکہ دھرنا کو خطاب کرنے والوں میں بہوجن مکتی مورچہ کے چھتری یادو، پچھڑا طبقہ کے ضلع کنوینر سریندر یادو، سید ساجد اشرف ،سرپنچ نوشاد عالم،مفتی فیاض عالم قاسمی،حیدرعلی،شاہد مصطفی،بام سیف کے سریندر یادو، محمد مظفر عادل، محمد فرقان، نورانجم قادری، محمد فیروز، منور عالم، عبدالسلام،.مولانا نور عالم، سنجے یادو ،جہاں آرا اور چھوٹی بچی شازیہ وغیرہ کےنام قابل ذکر ہیں۔ اس دھرنا میں نوجوان شاعر محمد سعد کی شاعری نے جوش بھر دیا. آخر میں محمد ابوذر کے دلکش آواز میں اے میرے وطن کے لوگو نغمہ سے ساتھ دھرنا کے دوسرے کا پروگرام اختتام کو پہنچا..
آج کے دھرنامیں شرکت کرنے والوں میں عبدالسلام امین،چاندمنظرامام،حافظ فیروز،حافظ کوثرامام،پن پن یادو، ابھیمنیو کمار،مسعوداخترجاوید،چاندمنظرامام،حافظ فیروزعالم،قاضی شاداب اعظم،منورعالم،عقیل احمدچاند ،صحافی وجیہ، احمدتصور،منظور عالم،مدثر حسین، تحسین رضا،جعفرامام۔ظل الرحمن قاسمی وغیرہ کےنام قابل ذکرہیں۔

مزید پڑھیں

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

متعلقہ خبریں

جواب دیجئے

Close