بہار و سیمانچل

الخلیل ایجوکیشنل اینڈ ویلفیئر ٹرسٹ کے زیر اہتمام ڈھاکہ وپتاہی کے درجنوں گاؤں کے تین سو سے زائد غریبوں کو کپڑے اور ضروری اشیاء کیئے گیئے تقسیم

بلا تفریق مذہب غریبوں، ضرورت مندوں اور محتاجوں کے کام آناہی سب سے بڑی انسانیت ہے: مفتی حسیب اللہ حبیبی قاسمی

چمپارن موتیہاری (نمائندہ ہندوستان اردو ٹائمز) سماج کے غریبوں اور ضرورت مندوں کی امداد سب سے بڑی انسانیت ہے، ہمیں اگر اللہ رب العزت نے صاحب استطاعت بنایا ہے تو ہمیں چاہیے کہ ہم مالک المک کی مخلوق کے مصیب کا سہارا بنیں، معاشرے کے غریب اور نادار افراد کی اعانت کرنا اور انکی ضروریات کی تکمیل کرتے ہوئے ان کے سکھ دکھ میں شریک ہونا ہم سب کی اولین دینی اور قومی ذمہداری ہے-یہ باتیں الخلیل ایجوکیشنل اینڈ ویلفیئر ٹرسٹ پٹنہ کے بانی وصدر الحاج مولانا مفتی حسیب اللہ حبیبی قاسمی نے مشرقی چمپارن کے ڈھاکہ کے درجنوں گاؤں میں بیوہ، یتیم، بے سہارا ،مسکین اور غریبوں کے مابین تین سو جوڑے کپڑے،کمبل و روز مرہ کی ضروری اشیاء تقسیم کرنے کے بعد منعقد پریس کانفرنس سے کہیں- انہوں نے کہا کہ بلا تفریق مذہب غریب ،محتاج، مسکین اور ضرورت مندوں کے مابین اشیاء تقسیم کی گئ ہیں-ہم اللہ تعالی کی خوشنودی ضرورت مندوں کی ضرورت کی تکمیل کرکے اور ان کا ساتھ دیکر حاصل کرسکتے ہیں- ضرورت مندوں کی دلجوئ اور حاجت روائ ہر مذہب کی بنیادی تعلیم ہے- اور مذہب اسلام نے بھی غریبوں کے کام آنے اور ان کا تعاون کرنے کی ہدایت جابجا دی ہے، انہوں نے کہا کہ ہمیں صحابہ کی زندگی سے سبق حاصل کرنا چاہیے کہ صحابہ خود بھوکے رہ جاتے تھے لیکن دوسروں کو پیٹ بھر کے کھلایا کرتے تھے، انہوں نے کہا کہ آج ضرورت اس بات کی ہے کہ آج ہم سماج اور معاشرے کی رفاہی کاموں میں پیش پیش رہیں-اوروں کی خوشی اور بہتر سماج کی تشکیل کے لئے متحد ہوکر کام کریں- انہوں نے بتایا کہ الخلیل ایجوکیشنل اینڈ ویلفیئر ٹرسٹ کے زیر اہتمام ڈھاکہ اور پتاہی کے درجنوں گاؤں میں لوگوں کے مابین کپڑے، کمبل اور ضروریاتی اشیاء تقسیم کیئے گئے- اس موقع پر ٹرسٹ کے ذمہدران کے علاوہ قاری قمر الہدی، قاری سراج احمد، پیون نثار احمد، نجم الہدیٰ ،شفاء الرحمن، صفات عالم اور نفیس احمد نے مڑلی، داؤد نگر، بھنڈار، لہسنیا، کھوڑی پاکر، محمد پور،جھٹکاہی، برتا ٹولہ اور سپہی سمیت کئ گاؤں میں گھوم گھوم کر غریبوں کے مابین اشیاء تقسیم کیئے ہیں- انہوں نے کہا کہ ٹرسٹ کے مقاصد میں سے ہے کہ بیواؤں کے بچیوں کی شادی اور انکی کفالت کو یقنی بنانا ہے ،حال ہی میں کئ غریب بچیوں کی شادی کے مناسبت سے سامان بھی تقسیم کیئے گئے ہیں-

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

Leave a Reply

متعلقہ خبریں

Back to top button
Close
Close