بہار و سیمانچل

نوادہ میں CAB کے خلاف 20 دسمبر کو احتجاجی جلوس نکالنے کا لیا گیا ہے فیصلہ : مولانا محمد جہانگیرعالم مہجورؔالقادری

نوادہ (پریس ریلیز) شہرنوادہ کی متحدہ مکاتب فکر کی تنظیم مجلسُ العلماء والامہ کے زیر اہتمام 15 دسمبر بروز اتوار کو ضلع سطح کے تمام مکاتب فکر علماء، ائمہ اور  بلا تفریق مذہب و ملت کے دانشوروں  کی ایک اعلیٰ سطحی میٹنگ مجلس کے دفترمیں جناب پروفیسر الیاس الدین کی صدارت میں ہوئی جس کی نظامت مولانامحمدجہانگیرعالم مہجورؔالقادری صدر تنظیم عُلمائےحق ضلع نوادہ نے کی اس میٹنگ میں ضلع کے تمام بلاکوں کے علماء عوام اور دانشوروں نے کثیر تعداد میں شرکت کی اور سی اے بی و این آر سی کے جو مضر اثرات ہیں اس سے عوام کو روشناس کرایا اور با اتفاق رائے یہ فیصلہ لی گیا کہ آئندہ جمعہ 20 دسمبر کو بعد نماز جمعہ ٹھیک 2:00 بجے ایک زبردست احتجاجی پر امن جلوس نکالا جائے گا جو شہر کے سدبھاؤنا چوک سے رجولی بس اسٹینڈ ہوتے ہوئے سنار پٹی اسٹیشن روڈ اندرا چوک اور ہسپتال روڈ ہوتے نوادہ کلکٹریٹ پہونچ کر صدر جمہوریہ ہند، وزیراعظم اور وزیر داخلہ کے نام کامیمورنڈم اور مطالبات ڈی ایم کو سونپا جائے گا اس کے بعد شہید بھگت سنگھ چوک ہوتے ہوئے کلالی روڈ سے گذر تا ہوا یہ جلوس نوادہ کے نئے پل سے گذر تا ہو بڑی درگا گیا روڈ سے گذرےگا  جس کی قیادت مولانا نعمان اخترفائق جمالی ،قاری شعیب احمد، پروفیسر الیاس الدین، مولانا محمد جہانگیرعالم مہجورالقادری، مولاناسیدارشدافضلی ،مولانا نوشاد عالم قاسمی کریں گے اس میٹنگ میں اس بات کی خاص تاکید کی گئی ہے کہ جلوس پورے ڈسپلن اور ضابطہ کے ساتھ ہو اور کسی طرح کے مذہبی یا اشتعال انگیز نعرے نہیں لگائے جائیں گے اور نہ اس جلوس میں کسی سیاسی جماعت کا بینر ہوگا نعرے وہی لگائے جائیں گے جو میٹنگ میں اتفاق رائے سے طے پایا شرپسند عناصر پہ گہری نظر رکھی جائے گی اور ڈراؤن کیمرے کا جا بجا استعمال کیا جائے گا
جن لوگوں نے اپنے قیمتی تاثرات کا اظہار کیا ان میں  پروفیسر الیاس الدین، مفتی محب رضا فیضی، رقیب خاں ایڈوکیٹ، مولانامحمدجہانگیرعالم مہجورؔالقادری، قاری شوکت مظاہری، مولاناسیدارشدافضلی، مولانا نصیرالدین مظاہری، مولانا ابو صالح ندوی، مولانا نوشاد عالم قاسمی ،مفتی عنایت اللہ قاسمی ،سید مسیح الدین، مولانا معراج قاسمی اور کرشن دیو چودھری بام سیف کےنام قابلِ ذکر ہیں
(نوٹ) یہ اطلاع مولانا محمدجہانگیرعالم مہجورالقادری نے دی ہے 

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

متعلقہ خبریں

جواب دیجئے

Back to top button
Close
Close