بہار و سیمانچل

گوڈسے اور ساورکر کی طرفداری جمہوریت کا قتل – رویش کمار

چمپارن کے صحافیوں نے کیا استقبال,پیش کیا گیا پھولوں کا ہار

گوڈسے اور ساورکر کی طرفداری جمہوریت کا قتل – رویش کمار
چمپارن کے صحافیوں نے کیا استقبال,پیش کیا گیا پھولوں کا ہار
مشرقی چمپارن ( رپورٹ عاقب چشتی )
تعلیم کی اہمیت ہردور میں رہی ہے اور بغیر تعلیم کے انسان نہ خود ترقی کرسکتا ہے اور نہ ہی ملک کو ترقی سے ہمکنار کرسکتا ہے اور ملک کی تاریخ اور آئین کو سمجھنے کے لیے بھی تعلیم کی سخت ضرورت ہے اس دور میں ملک کی تاریخ کو مٹانے کی کوشش کی جارہی ہے اور غلط تاریخ بیان کرکے بچوں کو نوجوانوں کو گمراہ کیا جارہا ہے جو نہایت افسوسناک ہے اس کی سب سے بڑی وجہ ملک کے لیڈران اپنی تاریخ سے ناآشنا ہیں مذکورہ باتیں جرنلسٹ ویلفیئر سوسائٹی مشرقی چمپارن کے زیر اہتمام اریراج میں منعقدہ استقبالیہ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے این ڈی ٹی وی مینیجنگ ایڈیٹر رویش کمار نے کہی اور مزید کہا کہ اس ملک کی تہذیب و تمدن صدیوں پرانی ہے یہاں مختلف ذات رنگ نسل کے لوگ جس عقیدت و محبت کے ساتھ رہتے ہیں وہ عدیم المثال ہے ہمارے قومی لیڈران گوڈسے اور ساورکر کے نظریات کی حامی بھررہے ہیں ہماری جمہوریت کے لیے نہایت خطرناک ہے اور انہیں دیش پریمی کی سند دی جارہی ہے اور گاندھی جی کے نظریات کی مخالفت کی جارہی ہے اگر تاریخ کے اوراق سے گاندھی جی کو نکال دیا جائے تو یہ ملک بے روح ہوجائے گا  سردار بلب بھائی پٹیل کی تاریخ جس طرح لوگوں کو بتائی جارہی ہے وہ بالکل غلط ہے دفعہ 370 کا روڈ میپ ان کے ہی گھر میں تیار کیا گیا تھا ملک میں روز بروز فرقہ پرستی بڑھتی جارہی ہے جو ملک کی امن و سلامتی کے لیے نہایت خطرناک ہے آج پہلو خان اور انسپیکٹر سبودھ کمار سنگھ کے قاتلوں کا استقبال کیا جارہا ہے ان کا مجسمہ نصب کیا جارہا ہے اس سے ہمارے بچوں,نوجوانوں میں تشدد,نفرت پیدا ہوگی جو ان کے بہتر مستقبل کے لیے خطرناک ہے ملک کو راستے پر لے جایا جارہا ہے وہ نیک فال نہیں ہے حکومت اپنی ناکامیوں پر پردہ ڈالنے کے لیے فرقہ پرستی کی فضا قائم کررہی ہے اور میڈیا کی آزادی پر پابندی عائد کرنے کی ہر ممکن کوشش کی جارہی ہے جب ہماری میڈیا چاپلوس ہوجائیگی اور بغیر سوچے سمجھے لکھنے بولنے لگی اور کسی خاص پارٹی کی غلام ہوجائے گی تو ملک کی جمہوریت ختم ہوجائے گی اس لیے ملک کی فضا اور حالات کو سازگار بنانے کی کوشش ہونی چاہیے نفرتوں کی جگہ محبت عام ہونی چاہیے
اس موقع سے موجود صحافیوں نے پھولوں کا ہار پیش کر استقبال کیا جبکہ سوسائٹی کے نائب صدر عزیر انجم,سکریٹری ارون تیواری,سنجے پانڈے,جتیندر گری,پون اپادھیائے,ڈاکٹر این این تیواری,بھولا مشرا,منا پانڈے,عقیل مشتاق,عزیر سالم,فضل المبین,راکیش رتن,راجکمار گری سمیت اریراج سب ڈویژن کے تمام صحافی موجود تھے

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

متعلقہ خبریں

Back to top button
Close
Close