بہار و سیمانچل

مولاناحمزہ حسنی ندویؒ کاوصال ندوۃ العلماء کابڑانقصان :مولانااحمدولی فیصل رحمانی

مونگیر ، 8 مئی (ہندوستان اردو ٹائمز) مولاناحمزہ حسنی ندویؒ ،ندوۃ العلماء کے لیے ریڑھ کی ہڈی کی حیثیت رکھتے تھے۔ان کے انتقال سے مولانارابع حسنی ندوی مدظلہ اورندوۃ العلماء کاہی نہیں بلکہ علمی وادبی دنیاکابھی بڑانقصان ہواہے۔وہ امیرشریعت مولانامحمدولی رحمانی ؒ کے قدرداں اورعقیدت مندتھے۔امیرشریعت بھی انھیں عزیزرکھتے تھے۔خانقاہ رحمانی اورجامعہ رحمانی سے ان کاگہراتعلق تھا،ان کاوصال گھرکے ایک فردکی رحلت کی طرح ہے۔اللہ تعالیٰ ان کی مغفرت فرمائے اوران کے حسنات قبول کرے اوردرجات بلندکرے ۔آمین ۔ان خیالات کااظہارخانقاہ رحمانی کے سجادہ نشیں مولانااحمدولی فیصل رحمانی نے حضرت مولاناحمزہ حسنی ندویؒ نائب ناظم ندوۃ العلماء کے سانحہ ارتحال پراظہارتعزیت کرتے ہوئے کیا۔سجادہ نشیں محترم نے یہ بھی کہاکہ والدبزرگوارامیرشریعتؒ نے آخری دنوں میں جن احباب وعزیزوں کوخطوط لکھے تھے،ان میں حضرت مولاناحمزہ حسنی ندویؒ بھی تھے۔حضرت مولانامحمدرابع حسنی ندوی مدظلہ عمرکی جس منزل پرہیں ایسے وقت میں نوجوان اورمعتمدکارخصت ہوجاناان کے لیے بڑاسانحہ ہے۔ اللہ تعالیٰ گھروالوں کوصبرجمیل دے،ندوۃ العلماء اورملت اسلامیہ کوان کانعم البدل عطافرمائے۔ان کے انتقال پرخانقاہ رحمانی میں ایصال ثواب اوردعاء کااہتمام کیاگیا۔

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

Leave a Reply

Back to top button
Close
Close