حیدرآباد

بھاجپا نوپور شرما کو دہلی کی وزیراعلیٰ کا امیدوار بناسکتی ہے:اویسیؔ

حیدرآباد ، 19جون (ہندوستان اردو ٹائمز) آل انڈیا مجلس اتحاد المسلمین کے سربراہ اسد الدین اویسی نے نوپور شرما کی گرفتاری کا مطالبہ کرتے ہوئے کہ ان کے خلاف آئین ہند کے مطابق کارروائی کرنے کی بات کہی ہے۔ رکن پارلیمان اسد الدین اویسی نے ایک بار پھر مرکزی حکومت کو گھیرنے کی کوشش کی ہے۔ نوپور شرما سے لے کر اگنی پتھ اسکیم تک جاری ہنگامے کا ذکر کرتے ہوئے اویسی نے حکومت پر شدید حملہ کیا۔انہوں نے کہا کہ نوپور شرما کو گرفتار کیا جائے اور ان کیخلاف قانون کے دائرے میں رہ کر کارروائی کی جائے۔

مجھے یقین ہے کہ نوپور شرما چھ سات ماہ میں دوبارہ آئیں گی اور انہیں ایک بڑے رہنما کے طور پر پیش کیا جائے گا۔ ہو سکتا ہے کہ وہ دہلی کی وزیر اعلیٰ کے عہدے کی دعویدار بن جائیں۔انہوں نے بلڈوزر کی کارروائی کے بارے میں کہا کہ آفرین فاطمہ کے گھر میں توڑ پھوڑ کی گئی۔ آپ نے ان کے گھر کو کیوں توڑا ،کیونکہ ان کے والد نے احتجاجی مظاہرے میں حصہ لیا تھا، یہ کارروائی پرنسپل آف نیچرل جسٹس آئین کے بنیادی ڈھانچے کا حصہ ہے۔عدالت ان کے والد کو سزا دے گی، ان کی بیٹی یا بیوی کو نہیں۔

اویسی نے مزید کہا کہ عدالت ان کے گھر کو گرانے کے احکامات جاری نہیں کرے گی۔ وہ گھر آفرین فاطمہ کی والدہ کے نام پر تھا اور اسلام میں اگر گھر کسی بہن، بیٹی، بیوی کے نام پر ہے تو اس پر اس کا حق ہے نہ کہ اس کے شوہر کا۔ آپ نے ان کے والد کو نوٹس دے کر گھر توڑ دیا۔ کیا یہ آپ کا انصاف ہے؟اگنی پتھ اسکیم کو لے کر جاری ہنگامہ پر اویسی نے کہا کہ مودی کے غلط فیصلے کی وجہ سے نوجوان سڑک پر نکل آئے ہیں۔

مودی کے غلط فیصلے کی وجہ سے نوجوانوں کی جوانی کو برباد کرنے کا راستہ مل گیا۔انہوں نے مزید کہا کہ میں وارانسی کے پولیس کمشنر سے پوچھنا چاہتا ہوں کہ جب انہوں نے بچوں کو سمجھانے کی بات کی تو کیا مسلمانوں کے بچے آپ کے بچے نہیں ہیں؟ کیا آپ انہیں اپنا بچہ سمجھتے؟ ہم بھی اس ملک کے بچے ہیں۔ آپ کو گزشتہ جمعہ کو ان بچوں سے بھی بات کرنی تھی۔

ہماری یوٹیوب ویڈیوز

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button