بنگلور

کرناٹک میں 12 مئی کے بعد نافذ ہوسکتا ہے مکمل لاک ڈاؤن! بنگلورو میں کووڈ۔19 مثبت کیسوں کی شرح 55 فیصد سے بھی زائد

بنگلوو : کرناٹک حکومت 12 مئی 2021 کے بعد دو ہفتوں کے لئے ریاست میں مکمل لاک ڈاؤن نافذ کرنے پر غور کر رہی ہے۔ کیونکہ ریاست میں ایک ہفتے کے کرفیو کے باوجود کووڈ۔19 میں تیزی سے اضافہ ہی ہو رہا ہے۔ میڈیا کی ایک رپورٹ کے مطابق بہت سے شعبوں جیسے مینوفیکچرنگ، تعمیرات اور گارمنٹس کی فیکٹریاں 50 فیصد ہی کام کررہی ہیں۔ گذشتہ 27 اپریل سے دو ہفتوں کے کرفیو کے بعد بھی بغیر جانچ پڑتال والی گاڑیوں کی نقل و حرکت کی وجہ سے وائرس کے پھیلاؤ میں اضافہ ہوا ہے۔

کرفیو کے آغاز کے ساتھ ہی لوگوں کے حالیہ نقل و حرکت کی وجہ سے بنگلورو اور دوسرے اضلاع میں بھی کووڈ۔19 کے کیسوں میں لگاتار اضافہ ریکارڈ کیا گیا ہے۔ گذشتہ روز موجودہ کرفیو کے نتائج پر تبادلہ خیال کرنے کے لئے کابینہ کا اجلاس منعقد کیا گیا۔ سی ایم یدیورپا نے صحافیوں کو بتایا کہ کابینہ 12 مئی کو صورتحال کا جائزہ لے گی اور اس کے بعد لاک ڈاؤن نافذ کرنے کے امکان پر فیصلہ کرے گی۔

دوسری طرف ایک ماہر پینل مئی کے اختتام تک چیف منسٹر کو کسی قسم کی نرمی کے بغیر مکمل لاک ڈاؤن کا مشورہ دے رہا ہے تاکہ دوسرے اضلاع میں جون کے وسط تک وبائی بیماری پھیلنا نہ شروع ہوجائے۔

دریں اثنا پیر کو بنگلورو میں کورونا کے مثبت کیسوں کی شرح 55 فیصد رہی۔ جس کے بعد مجموعی طور پر کووڈ۔19 کے 3 لاکھ سے بھی زائد کیس ریکارڈ کیے گئے۔

( نیوز ۱۸ اردو کے شکریہ کے ساتھ )

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

Leave a Reply

Back to top button
Close
Close