بنگال

وزیراعلی ممتابنرجی نے گورنر پر لگایابدعنوان ہونے کا الزام

جگدیپ دھنکھڑ نے کہا کسی چارج شیٹ میں میرا نام نہیں

کولکاتہ، 28 جون (ہندوستان اردو ٹائمز) مغربی بنگال کی وزیر اعلی ممتا بنرجی اور ریاست کے گورنر جگدیپ دھنکھڑ ایک دوسرے پر سیاسی وارپلٹ وارکرت رہے ہیں۔ پیر کے روز ان کے درمیان تنازعہ اس وقت بڑھ گیا جب بنگال کی وزیر اعلی نے جین حوالہ کیس کا نام لیتے ہوئے جگدیپ دھنکھڑ کو نشانہ بنایا اور انہیں بدعنوان قرار دیتے ہوئے سوال کیا کہ مرکزی حکومت ایسے گورنر کو کیوں منظوری دیتی ہے۔ادھرگورنر جگدیپ دھنکھڑ نے ممتا کے سنگین الزامات کا جواب دیا اور اسے سنسنی خیز بیان قرار دیا۔ ممتا بنرجی پر حملہ کرتے ہوئے انہوں نے کہاکہ میرا نام کسی چارج شیٹ میں نہیں ہے۔ جین حوالہ کیس میں کسی کے خلاف کوئی الزام عائد نہیں کیا گیا تھا۔ ممتا نے سنسنی پھیلانے کے لئے یہ غلط معلومات دی ہیں، میرے خلاف ممتا کے الزامات جھوٹے ہیں، مجھے کسی حوالہ سے کوئی سروکار نہیں ہے۔بنگال کے گورنر نے مزید کہا کہ میں کسی بھی حالت میں سر نہیں جھکا ئوں گا، جو بھی ہوتا ہے، میں ہار نہیں مانوں گا،میں مغربی بنگال کی عوام کی خدمت کے لئے ہر ممکن کوشش کروں گا۔اس سے قبل پیر کو وزیراعلی ممتا نے کہا تھا کہ میں نے مغربی بنگال کے گورنر کو ہٹانے کے لئے تین خطوط لکھے ہیں۔ وہ ایک بدعنوان شخص ہے۔ ممتا بنرجی نے کہا کہ ان کا نام حوالہ جین کیس کی چارج شیٹ میں تھا جو 1996 میں منظر عام پر آیا تھا لیکن وہ عدالت گئے اور وہاں سے سارا معاملہ کلیئر ہوگیا لیکن پھر پی آئی ایل دائر کردی گئی، جس پر کوئی فیصلہ نہیں آیا ہے ، وہاں پی آء ایل زیر التوا ہے۔

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

Leave a Reply

Back to top button
Close
Close