بنگال

مغربی بنگال: بی جے پی کارکنان نے ٹی ایم سی میں شامل ہونے کیلئے دیا دھرنا ،ہوئی گھرواپسی

کولکاتہ،14جون (ہندوستان اردوٹائمز) مغربی بنگال سے ایک دلچسپ سیاسی تصویر سامنے آئی ہے۔ بی جے پی کارکنان ٹی ایم سی آفس کے باہر دھرنے پر بیٹھ گئے۔ ان کا مطالبہ تھا کہ ہمیں دوبارہ ٹی ایم سی میں لے جایا جائے۔ یہ عجیب و غریب منظر پیر کو مغربی بنگال کے ویر بھوم میں دیکھنے کو ملا جہاں بی جے پی کے تقریبا 50 کارکنان ٹی ایم سی آفس کے باہر دھرنے پر بیٹھے تھے۔ان سب نے اپنے ہاتھوں میں پلے کارڈ لے رکھے تھے جس پر لکھا تھا کہ ہم ممتا بنرجی کی چھترچھایہ میں واپس آنا چاہتے ہیں۔ ایک میں لکھا تھا کہ بی جے پی میں شامل ہونا ہماری غلطی تھی۔ بیربھوم ضلع کے ایلام بازار میں ٹی ایم سی آفس کے سامنے بی جے پی کے کارکنان دھرنے پر بیٹھے تھے۔ آخر کار ٹی ایم سی کے مقامی لیڈران نے ان تمام بی جے پی کارکنان کو ٹی ایم سی میں شامل کیا۔

قابل غور ہے کہ کچھ دن پہلے مکل رائے نے بی جے پی کو چھوڑ کر ٹی ایم سی میں شامل ہوئے تھے۔ ٹی ایم سی میں شمولیت کے بعد انہوں نے کہا تھا کہ کوئی بھی اس حال میں بی جے پی میں نہیں رہے گا جیسا کہ بنگال میں ہے۔ انہوں نے کہا تھا کہ بنگال آج ایک بار پھر اپنی جگہ پر آگیا ہے۔ انہوں نے ممتا بنرجی کو ملک کا سب سے بڑا لیڈر بتایا۔ بتادیں کہ حالیہ مغربی بنگال اسمبلی انتخابات کے دوران ٹی ایم سی سمیت دیگر کئی جماعتوں کے لیڈران نے بی جے پی میں شمولیت اختیار کی تھی لیکن بنگال میں بی جے پی کی زبردست شکست کے بعداب بہت سارے لیڈران آہستہ آہستہ پارٹی سے دوری اختیار کرتے نظر آ رہے ہیں۔ لیڈر کے ساتھ کارکنان بھی اپنی’ گھر واپسی‘چاہ رہے ہیں۔

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

Leave a Reply

Back to top button
Close
Close