بنگال

بنگال الیکشن: چوتھے مرحلے کی 44 سیٹوںکے لئے آج ہوگی ووٹنگ ،کئی قدآور رہنمائوں کی قسمت کا ہوگا فیصلہ

کولکاتہ ،09؍ اپریل (ہندوستان اردو ٹائمز) مرکزی وزیر بابل سپریو اور مغربی بنگال کے وزیر پارتھ چٹرجی اور اروپ بسواس کی سیاسی قسمت کا فیصلہ ہفتہ کو چوتھے مرحلے کے انتخابات کی ووٹنگ میں ہوگا ، جس کے لئے تیاریاں مکمل کرلی گئی ہیں۔ 10 اپریل کو ہونے والے انتخابات میں بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کے دو ارکان پارلیمنٹ بھی میدان میں ہیں۔ اس مرحلے میں شمالی بنگال کے کوچ بہار اور علی پوردوار اضلاع اور جنوبی 24 پرگناس ، ہاوڑہ اور ہوگلی میں 44 اسمبلی سیٹوںپر پولنگ ہوگی۔

الیکشن کمیشن نے 44 حلقوں میں قائم 15940 پولنگ اسٹیشنوں میں سنٹرل آرمڈ پولیس فورس (سی اے پی ایف) کی کم از کم 789 نفری تعینات کی ہے۔ زیادہ تر 187 سی اے پی ایف اہلکار کوکوچ بہار میں تعینات ہوں گے ، جہاں انتخابی مہم کے دوران تشدد کے واقعات دیکھنے میں آئے۔ بابل سپریو اور کولیکا میں بنگالی فلم انڈسٹری کا دل کہلانے والے ٹولی گنج کے ممبر ایم ایل اے اروپ بسواس کے خلاف انتخابی جنگ دلچسپ ہوگی۔

اسی کے ساتھ ٹی ایم سی کے جنرل سکریٹری پارتھ چٹرجی بیہالا ویسٹ سیٹ سے بی جے پی کے امیدوار اور فلم اداکارہ شربنتی چٹرجی سے مقابلہ ہوگا۔ہفتہ کو ہونے والے انتخابات میں ٹی ایم سی سے بی جے پی میں شامل ہونے والے راجیو بینرجی کی قسمت کا بھی فیصلہ کیا جائے گا۔ ممتا بنرجی کی کابینہ میں سابق وزیر راجیو بینرجی ضلع ہاڑہ سے الیکشن لڑیں گے۔ شبھندو ادھیکاری اور راجیو بینرجی جو ٹی ایم سی چھوڑ کر بی جے پی میں شامل ہوچکے ہیں تقریبا ہر انتخابی اجلاس میں ٹی ایم سی کی سپریمو ممتا بنرجی کو نشانہ بناتے رہے ہیں اور انہیں غدار اور میر جعفر کے نام سے پکارتے ہیں۔

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

Leave a Reply

Back to top button
Close
Close