ممبئی

بلقیس بانو کے مجرمین اٖۤزاد ہیں۔ بیٹی کی عزت نیلام ہوئی راہی ہیں ۔مودی حکومت خاموش۔۔

اۤل انڈیا مجلس ممبران نے دیولگاوں راجہ تحصیدار کو پیش کیا محضر۔۔۔

دیولگاوں ماہی (اختر خان ) ملک کے اندار بیٹی کے پیغام عام ہیں۔بیٹی ہیں تو ملک کی شان ہیں۔بیٹی پٹروں بیٹی بچاو ں یہ صرف نعر ے بول میں اچھے دیکھی دتیے ہیں ۔ حققیت میں اس کا کوئی اثر نہیں ہیں۔ملک میں انصاف کوئی عدالت نظر نہیں اۤتی۔ بلقیس بانو پر جو ظلم و ستم ہوا ہیں۔ اس کے ذمہ دار ملک کے وزیر اعظم ہیں۔ دیولگاوں راجہ تحصیدار کومحضر کے ذریعےاس با ت کی ندمات کی گئی ہیں۔ کہ بلقیس بانو کے خاندان کے ساتھ ظلم و ستم ہوا ہے اس مجرموں کو عمر قید کی سزا ہوئی ۔

لیکن اۤزادی کے جشن کے موقع پر امرت مہوتسو پر ان دارندوں کا اۤزاد کردیاگیا۔ جس کی وجہ سے ملک میں ہر جگہ بلقیس بانو کے حق میں اۤواز بلند ہورئی ہیں۔ ان مجرموں کو اۤزاد ہونے کے بعد ان استقبال کیا گیا ا مٹھایئاں تقسیم کی گی۔ تشدد کرنے والے مجرم اۤزاد ہیں۔ اس فیصلہ سے ملک کی تما م خواتین کے دل مجروح اور داغ داغ ہوگیا ۔ اتنی وحیشت اور دوخ بٹری داستان کا فیصلہ صرف چند گھنٹوں میں سنایا گیا۔

اس محضر میں اس بات کو پیش کیا گیا کہ 2002 میں ہوئے 11 قاتلوں نےاس کےساتھ اجتماعی زیادتی کی ۔بیٹی کو زمین پر پٹک کر قتل کردیا گیا ۔ ان قاتلوں کو حراست میں لیکرسزا موت سنائی جائی۔اۤج بیس سال سے بلقیس بانو اپنے انصاف کےلیے اپنے حق کے لیے انصاف کی جنگ لٹررہی ہیں۔ اگر انھیں حرات میں نہیں لیا گیا۔ تو ہم راستوں پر اتر آ ئے گے۔نرنید مودی اور امت شاہ نے ملک ميں نفرت کا بیج بوا ہیں،ان کی حکومت میں کوئی عوام خواشحال نہیں ہیں۔ملزمین کو جلداز جلدازسزا دی جائے۔ اس میں موجودتعلقہ صدر شیخ سلموالدین ،شہزاد خان،انیس شاح،محسن خان،ابرار خان،انجم خان اور دیگر حضرات موجود تھے۔۔

ہماری یوٹیوب ویڈیوز

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button