دیوبند

بجلی کے کھمبے میں کرنٹ آنے سے چار مویشیوں کی موت ، متأثرہ شخص نے معاوضہ کا مطالبہ کیا

دیوبند، 5؍ جولائی (رضوان سلمانی) عیدالاضحی کے موقع پر فروختگی کے لئے لائے گئے چار مویشی بجلی کے کھمبے میں آئے کرنٹ کی زد میں آنے سے موت واقع ہوگئی۔ محلہ کے باشندوں نے محکمہ بجلی پر لاپرواہی کا الزام عائد کرتے ہوئے معاوضہ کا مطالبہ کیا ہے۔ محلہ شاہ ولایت کے رہنے والے ایک مویشی تاجر عیدالاضحی کو لے کر فروختگی کے لئے بڑی تعداد میں مویشی لایا تھا ، آج بجلی کے کھمبے میں کرنٹ پھیل جانے کیوجہ سے ایک مویشی تاجر کے چار مویشیوں کی دردناک موت ہوگئی ۔

متاثرہ تاجر نے ایس ڈی ایم کو ایک عرضی دیکر مالی امداد کی فریاد کی ہے ۔واضح ہو کہ بجلی محکمہ کی لاپرواہی کے سبب بجلی کے پول میں کرنٹ آجانے کیوجہ سے ایک مویشی تاجر کے چار جانوروں کی کرنٹ کی زد میں آکر دردناک موت واقع ہوگئی ۔منگل کے روز محلہ شاہرمزالدین میں واقع شاہ ولایت قبرستان کے قریب مویشی تاجر شہزاد نے اپنے جانور ایک بجلی پول سے باندھ رکھے تھے کہ اچانک پول میں کرنٹ آجانے کیوجہ سے چار وںجانور وں کی موقع پر ہی دردناک موت ہوگئی۔مویشی تاجر نے ایس ڈی ایم دیوبند کو ایک تحریر دیکر مالی مدد کئے جانے کی فریاد کی ہے ۔

متاثرہ مویشی تاجر شہزاد نے بتایا کہ وہ مویشیوں کا کاروبار کرتا ہے اور ان کی خریدو فروخت کرکے اپنے بال بچوں کے اخراجات پورا کرتا ہے ۔اس نے بتایا کہ اس نے بقر عید کے لئے چار کٹرے خریدے تھے جنہیں اس نے منگل کی صبح تقریبادس بجے شاہ ولایت قبرستان کے باہر موجود بجلی کے کھمبے سے باندھ دیا لیکن اس میں اچانک کرنٹ آجانے کیوجہ سے چاروں کٹروں کی موقع پر ہی موت ہوگئی ۔شہزاد نے بتایا کہ اس حادثہ کی وجہ سے اسے ایک لاکھ روپے سے زائد کا نقصان ہوا ہے ۔اس نے بتایا کہ اس نے ایک تحریر دیکر ایس ڈی ایم اور پولیس محکمہ سے معاوضہ یا مالی مدد دلائے جانے کا مطالبہ کیا ہے ۔

ہماری یوٹیوب ویڈیوز

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button