دیوبند

بجلی محکمہ کی لاپرواہی کے سبب کرنٹ کی زدمیں آکربھینسے کی موقع پر ہی موت

محکمہ بجلی کی لاپرواہی کے سبب اس سے قبل بھی شہر میں اس طرح کے کئی حادثات رونما ہوچکے ہیں۔سید حارث

دیوبند، 15؍ ستمبر (رضوان سلمانی) بجلی محکمہ کی لاپرواہی کے سبب شہر میں مسلسل افسوس ناک واقعات رونما ہورہے ہیں ۔جمعرات کی صبح بارش کے دوران بجلی کے پول میں آنے والے کرنٹ کی زد میں آکر ایک جھوٹے کی موت ہوگئی جبکہ بگی میں سوار شخص نے کود کر بمشکل اپنی جان بچائی ۔اس حادثہ کی اطلاع ملنے پر پولیس موقع پر پہنچ گئی ۔بعد ازاں بجلی افسران بھی جائے حادثہ پہنچ گئے اور انہوں نے حادثہ پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے لاپرواہ ملازمین کے خلاف کارروائی کئے جانے کی یقین دہانی کرائی ۔

موصولہ اطلاع کے مطابق جمعرات کی صبح بارش کے دوران محلہ ابوالمعالی کے باشندہ اکبر علی کا نوکر سیتا رام عرف سکھا جھوٹا بگی لیکر کھیت پر جانے کے لئے نکلا لیکن جیسے ہی وہ بیرون کوٹلہ پہنچا تو بارش کے باعث ایک بجلی کے پول میں کرنٹ آجانے کے سبب جھوٹے کو پول نے اپنی طرف کھینچ لیا ۔کرنٹ اتنا شدید تھا کہ جھوٹے کی موقع پر ہی موت ہوگئی جبکہ بگی میں سوار سیتا رام اور ایک دوسرے شخص نے بگی سے کود کر بمشکل اپنی بچائی ۔یہ حادثہ رونما ہوتے ہی وہاں افرا تفری کا عالم پیدا ہوگیا ۔یاد رہے کہ اس راستہ سے بڑی تعداد میں شہر کے مختلف اسکولوں میں جانے والے طلبہ وطالبات گذرتے ہیں ۔

اس حادثہ کی اطلاع ملتے ہی محکمہ بجلی کے جے ای وجے کمار شرما اور خانقاہ پولیس چوکی کے انچارج گیا نیندر موقع پر پہنچ گئے ۔میونسپل بورڈ کی رکن کے نمائندہ سید حارث نے بتایا کہ جس وقت یہ حادثہ ہوا اس وقت اسکول جانے والے بچے اپنے اپنے اسکولوں میں پہنچ چکے تھے ورنہ کوئی بڑا حادثہ بھی رونما ہوسکتا تھا ۔موقع پر پہنچے جے ای نے وہاں موجود لوگوں کو یقین دہانی کرائی کہ وہ بہت جلد بجلی کے پول کو درست کرائیں گے اور ایسا بندوبست کرائیں گے جس سے کرنٹ لگنے کاخطرہ باقی نہ رہے ۔جھوٹا بگی کے مالک اکبر علی نے بتایا کہ تین یوم قبل ہی اس نے 65ہزار روپے کا جھوٹا خریدا تھا ۔غور طلب ہے کہ محکمہ بجلی کی لاپرواہی کے سبب اس سے قبل بھی شہر میں اس طرح کے کئی حادثات رونما ہوچکے ہیں ۔

ہماری یوٹیوب ویڈیوز

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button