ممبئی

باہو بلی سابق ایم پی عتیق احمد کے ساتھی حمزہ انصاری گرفتار

الٰہ آباد(پریاگ راج)، یکم جولائی (ہندوستان اردو ٹائمز) سی بی آئی نے سابق رکن پارلیمان عتیق احمد کے ساتھی حمزہ انصاری کو گرفتار کر لیا ہے۔ حمزہ پر پراپرٹی ڈیلر موہت اگروال کے اغوا اور جیل میں مارپیٹ کا الزام ہے۔ پھول پور سیٹ سے سابق رکن پارلیمان عتیق احمد کے ساتھی حمزہ انصاری کو سی بی آئی نے گرفتار کر لیا ہے۔ذرائع کے مطابق سی بی آئی کی لکھنؤ ٹیم نے حمزہ انصاری کو الہ آباد کے کریلی علاقے کے قبرستان غوث نگر کے قریب سے گرفتار کیا ہے۔فی الحال سی بی آئی عتیق کے بیٹے عمر کی تلاش کر رہی ہے۔

ذرائع کے مطابق حمزہ انصاری دیوریا جیل کیس میں مطلوب تھے۔اس لیے سی بی آئی کی خصوصی عدالت نے بھی ان کے خلاف غیرضمانتی وارنٹ جاری کیا تھا۔ساتھ ہی حمزہ پر پراپرٹی ڈیلر موہت اگروال کے اغوا اور جیل میں مارپیٹ کا بھی الزام ہے۔خیال رہے کہ اس کیبعد پراپرٹی ڈیلر موہت اگروال نے لکھنؤ میں عتیق احمد اور ان کے بیٹے عمر اور دیگر کیخلاف اغوا اور مارپیٹ کا مقدمہ درج کرایا تھا۔عدالت کے حکم پر کیس کی تفتیش سی بی آئی کو منتقل کر دی گئی۔

اس واقعے کے بعد سے ملزم حمزہ انصاری مفرور تھے۔ آخر کار سی بی آئی نے انہیں گرفتار کر لیا ہے۔عتیق احمد کا بڑا بیٹا عمر بھی اسی کیس میں ملزم ہے۔ سی بی آئی نے عمر پر ایک لاکھ روپے کے انعام کا بھی اعلان کیا ہے۔ فی الحال وہ سی بی آئی کی گرفت سے باہر ہے۔ تفتیشی ادارہ عتیق احمد کے بیٹے عمر کی کافی عرصے سے تلاش میں مصروف ہے۔

ہماری یوٹیوب ویڈیوز

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button