اہم خبریں

کسان تحریک: کسان تنظیموں نے کمیٹی پرلگائے الزام ، سپریم کورٹ نے کہا، کمیٹی کو فیصلہ سنانے کا کوئی حق نہیں دیا

نئی دہلی،20جنوری(آئی این ایس انڈیا) زرعی قوانین پر تعطل ختم کرنے کیلئے سپریم کورٹ نے کمیٹی تشکیل دی۔ کچھ کسان تنظیموں نے اس کمیٹی پربھی الزام لگایا تھا۔ بدھ کے روز سپریم کورٹ نے اس پر سخت برہمی کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ اس نے کمیٹی کو فیصلہ سنانے کا کوئی اختیار نہیں دیا ہے۔کمیٹی سے متعلق معاملے پر چیف جسٹس ایس اے بوبڑے، جسٹس اے ایس بوپنا اور جسٹس وی رام سبرامنیم کی بنچ نے کہا کہ بنچ نے کمیٹی میں ماہرین کو مقرر کیا ہے کیونکہ جج اس معاملے میں ماہر نہیں ہیں۔ در اصل عدالت عظمیٰ نے ایک چار رکنی کمیٹی تشکیل دی تھی، جس کے بعد کچھ کسان تنظیموں نے اعتراض کیا کہ کمیٹی کے ارکان پہلے سے ہی زرعی قوانین کے حق میں تھے۔ کمیٹی کے ایک رکن نے تنازعہ کے پیش نظر کمیٹی سے دستبرداری اختیار کرلی۔بنچ نے کہاکہ اس میں تعصب کا سوال کہاں ہے؟ ہم نے کمیٹی کو فیصلہ دینے کا اختیار نہیں دیا ہے، آپ پیش ہونا نہیں چاہتے، اس چیز کو سمجھا جاسکتا ہے لیکن کسی نے صرف اپنی رائے ظاہر کی،اس وجہ سے اس پر الزام لگانا مناسب نہیں ہے، آپ کو کسی کو اس طرح سے برانڈ نہیں کرنا چاہئے۔ بنچ نے کہاکہ ہر ایک کی رائے ہونی چاہئے، یہاں تک کہ ججوں کی بھی رائے ہوتی ہے، یہ ایک کلچر بن گیا ہے، آپ جس کے بارے میں نہیں چاہتے اسے برانڈ کرنا معمول بن گیا ہے، ہم نے کمیٹی کو فیصلہ سنانے کا کوئی اختیار نہیں دیا ہے۔

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

متعلقہ خبریں

Back to top button
Close
Close