اہم خبریں

کمیٹی سے رکن کے ہٹنے پر مشترکہ کسان مورچہ نے کہا ،چھوٹی کامیابی ملی

نئی دہلی14جنوری(آئی این ایس انڈیا) نئے قوانین کے خلاف کسانوں کی تحریک پر سپریم کورٹ نے ایک چار رکنی کمیٹی تشکیل دی تھی۔ بھارتیہ کسان یونین صدر کمیٹی کے رکن بھوپندر سنگھ مان نے مشترکہ کمیٹی سے اپنا نام واپس لے لیا۔کسان یونین نے اسے اپنی چھوٹی سی فتح بتایاہے۔ اس پراپنے ردعمل میں متحدہ کسان مورچہ کے ایک رکن راجندر سنگھ دیپسنگھ والانے کہاہے کہ ہم اسے اپنی چھوٹی سی فتح کے طور پردیکھ رہے ہیں۔انہوں نے کہاہے کہ بھوپندر سنگھ مان کے استعفیٰ سے سپریم کورٹ کی مقرر کمیٹی کا وقارکم ہواہے۔ مان نے اپنے وقارکو سیاسی وقارکے لیے استعمال نہیںکیا۔ راجندر سنگھ دیپ سنگھ والا نے مزید کہاہے کہ ہمیں کمیٹی کو کوئی اہمیت نہیں دی جانی چاہیے۔ ہم کل کسان تنظیموں کے رہنماؤں کے ساتھ حکومت سے میٹنگ میں جائیں گے۔ کمیٹی مکمل طور پر حکومت نوازہے۔ ہم چاہتے ہیں کہ اس زرعی قانون کو پارلیمانی طریقہ کار کے تحت منسوخ کیاجائے۔ شروع میں ہی بھوپندر مان کے نام سے کمیٹی میں ہنگامہ برپا تھا۔ کسان رہنماؤں نے کہاہے کہ مان نے پہلے ہی تینوں نئے زرعی قوانین کی حمایت کی ہے۔

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

متعلقہ خبریں

Back to top button
Close
Close