اہم خبریں

اروناچل پردیش میں بی جے پی نے جے ڈی یو کوزورکاجھٹکا دیا : چھ ایم ایل اے پارٹی چھوڑ کر بی جے پی میں شامل

ایٹانگر 25دسمبر(آئی این ایس انڈیا) اروناچل پردیش میں جنتا دل (یو) کو بڑا دھچکا لگا ہے اوراس کے چھے ایم ایل اے کوپارٹنر حکمراں بھارتیہ جنتا پارٹی(بی جے پی)توڑنے میں کامیاب ہوگئی ہے۔اسی وقت اروناچل پردیش کی پیپلز پارٹی کے ایک ایم ایل اے نے بھی پارٹی تبدیل کرکے بی جے پی میں شمولیت اختیار کی ہے۔سترسے تینتالیس پرجدیوکوکس سازش کے تحت لایاگیا،یہ پورابہارجانتاہے۔اس میں لوجپاکااستعمال کس نے کیا،یہ واضح ہے۔اب جدیوایم ایل اے کوتوڑاگیاہے۔اس پرنتیش کمارکی ’انترآتما‘کیاکہتی ہے یہ دیکھنے والی بات ہوگی۔بی پی پی میں شامل ہونے والے پی پی اے ایم ایل اے کے نام کا نام کاردو نیاگور رکھا گیا تھا۔پی پی اے نے اس ماہ کے شروع میں نیاگیور کوپارٹی مخالف سرگرمیوں میں ملوث ہونے کا الزام لگاتے ہوئے معطل کردیا تھا۔اروناچل میں یہ واقعہ ایسے وقت میں ہواہے جب بی جے پی اور جے ڈی یو کی زیرقیادت قومی جمہوری اتحاد (این ڈی اے) گذشتہ ماہ بہار اسمبلی انتخابات کے نتائج میں 125 نشستوں کے ساتھ کانٹوں میں اکثریت حاصل کرنے میں کامیاب رہا تھا۔ اگرچہ اس انتخابات میں نتیش کمارکی زیرقیادت جے ڈی یو کو کافی نقصان اٹھانا پڑا ، لیکن بی جے پی نے زبردست کامیابی حاصل کی ہے۔بی جے پی نے اس طرح بہارمیں بھی جدیوکوکمزورکیاہے۔لوجپاکے ساتھ اس کاسلوک ابھی تک مشفقانہ ہے۔

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

متعلقہ خبریں

Back to top button
Close
Close