اہم خبریں

حکومت کے ساتھ مذاکرات بے نتیجہ ،احتجاج جاری رہے گا

کسانوں کویقین دہانیوں پراعتمادنہیں، 3 دسمبرکو دوبارہ ملاقات کاامکان،کمیٹی کی تشکیل کاوقت نہیں

نئی دہلی یکم دسمبر(آئی این ایس انڈیا) کسانوں اورحکومت کے مابین آج کے مذاکرات بے نتیجہ رہے۔ حکومت اورکسان 3 دسمبر کو ایک بار پھرملاقات کریں گے۔وزیرزراعت نریندر سنگھ تومر نے کہاہے کہ ہم نے کسانوں کو یقین دہانی کرانے کی کوشش کی۔ ہم نے انہیں سمجھانے کی کوشش کی۔ وزیر زراعت نے کہاہے کہ ہم 3 دسمبر کو دوپہر 12 بجے دوبارہ بات چیت کریں گے۔ حکومت کاشتکاروں سے احتجاج ختم کرنے کا مطالبہ کرتی ہے۔ اسی دوران کاشتکاروں نے کہاہے کہ ان کا احتجاج جاری رہے گا۔ ذرائع کے مطابق کاشتکاروں کو کمیٹی سے کوئی اعتراض نہیں ہے ، لیکن ان کا کہنا ہے کہ ان کایہ احتجاج اس وقت تک جاری رہے گی جب تک کہ کمیٹی کسی نتیجے پر نہیں پہنچتی اورکچھ بھی ٹھوس نہیں ہوتا ہے۔ حکومت نے یہ تجویزبھی پیش کی ہے کہ کمیٹی روزانہ بیٹھ کراس پرتبادلہ خیال کرنے کے لیے تیار ہے تاکہ جلدہی نتائج سامنے آسکیں۔ذرائع کے مطابق کسان کے نمائندے کا کہنا تھا کہ یہ نئے قوانین کسانوں کے لیے ڈیتھ وارنٹ ہیں۔ذرائع کے مطابق کسان تنظیم کے نمائندے نے کہاہے کہ آپ لوگوں نے ایک قانون لایاہے جوہماری زمین کو بڑی کارپوریشنوں میں لے جائے گا ، آپ کارپوریٹ دیں گے۔ اب وقت نہیں ہے کہ کمیٹی تشکیل دی جائے۔ آپ کہتے ہیں کہ آپ کسانوں کے ساتھ اچھا کرنا چاہتے ہیں ، ہم کہہ رہے ہیں کہ آپ ہمارے ساتھ اچھانہیں کریں گے۔

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

متعلقہ خبریں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close