اہم خبریں

کورونالوجی کوسمجھیں،تاجروں کوبینک کھولنے کی اجازت پرراہل گاندھی کاطنز

نئی دہلی24نومبر(آئی این ایس انڈیا) بینکنگ سیکٹرمیں این بی ایف سی کی سفارش پر کانگریسی لیڈر راہل گاندھی نے منگل کے روزمرکزکی مودی حکومت پرحملہ کیاہے۔ انہوں نے الزام لگایاہے کہ حکومت نے پہلے کچھ بڑی کمپنیوں کے قرضوں کو معاف کیا اور اب وہ انہیں صرف بینک کھولنے کی اجازت دے رہی ہے ، جس کی وجہ سے لوگوں کی بچت براہ راست ان کے بینکوں میں جائے گی۔راہل گاندھی نے لکھاہے کہ کورونالوجی کوسمجھیں ، پہلے کچھ بڑی کمپنیوں کے قرض معاف کردیئے ، پھر انھیں بڑی ٹیکس چھوٹ دی۔ اب لوگوں کی بچت کو ان کمپنیوں کے کھولے گئے بینکوں میں ڈالاجائے گا۔ سوٹ بوٹ کی سرکار۔ششی تھرور نے بھی ان کے ٹویٹ کاجواب دیا۔ششی تھرورنے کہاہے کہ یہ ایک اہم نکتہ ہے ، کانگریس کو معاشی اصلاح پسند بننا چاہیے ، جبکہ ارتقائی سمت کی راہ پربھی چلنا چاہیے۔سرمایہ داری کی مخالفت ہونی چاہیے۔اس سفارش کی مخالفت آر بی آئی کے سابق گورنر رگھورام راجن اور سابق نائب گورنر ویرل اچاریہ نے بھی کی ہے۔ ان دونوں سابقہ افسران نے مل کر ایک مضمون لکھا ہے ، جو لنکڈ پر پوسٹ کیاگیا تھا۔ اس مضمون میں انہوں نے کہا ہے کہ کارپوریٹ ہاؤسز کو بینکوں کے قیام کی اجازت دینے کی سفارش آج کی صورتحال میں حیرت انگیزہے۔ دونوں کا خیال ہے کہ بینک کاری شعبے میں کاروباری گھروں کی شمولیت کے حوالے سے حال ہی میں کوشش کی گئی حدود پر قائم رہنا زیادہ ضروری ہے۔ مذہب کااستعمال کرنے والی بی جے پی اورمجلس کوبنگال میں کوئی فائدہ نہیں ہوگا

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

متعلقہ خبریں

Back to top button
Close
Close