اہم خبریں

تیج بہادر کی درخواست پر سپریم کورٹ کافیصلہ آج

نئی دہلی23نومبر(آئی این ایس انڈیا) منگل کوبی ایس ایف کے سابق جوان تیج بہادر کی جانب سے وزیراعظم نریندر مودی کے وارانسی سے انتخاب لڑنے کے خلاف دائر درخواست پر سپریم کورٹ اپنا فیصلہ سنا دے گا۔17 نومبر کوعدالت نے اس درخواست پر فیصلہ محفوظ کرلیا۔ چیف جسٹس ایس اے بوبڑے ، جسٹس اے ایس بوپنا اور جسٹس وی رامسوبرمانیام کی بینچ فیصلہ سنائے گا۔ سابق فوجی تیج بہادرنے سپریم کورٹ میں درخواست دائر کرکے الہ آباد ہائی کورٹ کے فیصلے کو چیلنج کیا ہے۔ الہ آباد ہائی کورٹ کا خیال تھا کہ تیج بہادر نہ تووارانسی ووٹر ہیں اور نہ ہی وزیر اعظم مودی کے خلاف امیدوارہیں۔ اس بنیاد پر انتخابی درخواست دائر کرنے کاکوئی جواز نہیں ہے۔عدالت عظمی نے تیج بہادر کے وکیل کی سماعت ملتوی کرنے کی درخواست مسترد کردی۔ بنچ نے کہاتھاکہ وزیر اعظم آفس ایک اہم دفتر ہے اور اس کے خلاف درخواست غیر معینہ مدت تک زیر التواء نہیں رہ سکتی۔ سی جے آئی ایس اے بوبڑے نے تیج بہادر کے وکیل سے کہاتھاکہ ہم آپ کی درخواست التوامیں کیوں ڈالیں ، آپ انصاف کے عمل کاغلط استعمال کر رہے ہیں۔آپ بحث کر رہے ہیں۔ وکیل نے دلیل دی ہے کہ بہادرنے پہلے آزاد امیدوار اور بعد میں سماج وادی پارٹی کے امیدوار کی حیثیت سے اپنے کاغذات نامزدگی داخل کیے تھے۔تیج بہادر یادو نے وزیر اعظم مودی کے انتخاب کو چیلنج کرتے ہوئے الہ آباد ہائی کورٹ میں انتخابی درخواست دائر کی تھی۔ انتخابی درخواست میں ، تیج بہادر نے وزیر اعظم نریندر مودی کے انتخاب کومنسوخ کرنے کا مطالبہ کیا۔ انہوں نے درخواست میں الزام لگایاہے کہ وزیر اعظم کے دباؤپرالیکشن افسرنے غلطی سے نامزدگی منسوخ کردی ہے۔

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

Leave a Reply

متعلقہ خبریں

Back to top button
Close
Close