اہم خبریں

نیشنل کانفرنس کے سابق ایم ایل اے کودبئی جانے سے روکا گیا ، ایئر پورٹ پر تین گھنٹے کی تفتیش

نئی دہلی،14 ؍نومبر( آئی این ایس انڈیا ) نیشنل کانفرنس کے رہنما کو دبئی جانے سے روک دیا گیا۔ ذرائع کے مطابق جموں و کشمیر کے 33 سیاست دانوں کا نام اس فہرست میں شامل کیا گیا ہے جو بیرون ملک سفر نہیں کرسکتے ہیں۔ اس کے نتیجے میں نیشنل کانفرنس کے سابق ایم ایل اے الطاف احمد وانی کو دبئی جانے سے روکا گیا۔ انہوں نے کہا کہ سابق وزرائے اعلیٰ فاروق عبداللہ، عمر عبداللہ اور محبوبہ مفتی کے نام فہرست میں شامل نہیں ہیں، زیادہ تر سابق ایم ایل اے اور مختلف سیاسی جماعتوں کے سابق وزراء ہی ہیں۔نیشنل کانفرنس کے سابق ایم ایل اے نے بتایا کہ انہیں شام دبئی جانے والی پرواز میں سوار ہونے سے روک دیا گیا تھا، جہاں وہ دبئی میں ایک فیملی تقریب میں شرکت کے لئے جارہے تھے۔وانی جو پہلگام اسمبلی سیٹ سے ایم ایل اے تھے، انہوںنے بتایا کہ وہ بین الاقوامی ہوائی اڈے پر پہنچے۔ امیگریشن کاؤنٹر پہنچنے کے بعد انہیں کسی بہانے ایک کمرے میں لے جایا گیا کہ ان کے پاسپورٹ میں کچھ غلطیاں ہیں۔واضح رہے کہ آرٹیکل 370 کو ختم کرنے کے بعد جموں وکشمیر حکومت نے تقریبا 37 افراد کی فہرست بنائی ہے۔ 5 اگست 2019 کو جموں و کشمیر کی خصوصی حیثیت ختم کردیاگیا اور اسے دو مرکزی علاقوں میں تقسیم کردیا گیا۔ غیر ملکی سفر میں پابندی عائد فہرست میں نیشنل کانفرنس، پی ڈی پی، جے کے پیپلز کانفرنس کے رہنماؤں کے نام شامل ہیں۔

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

Leave a Reply

Back to top button
Close
Close