اہم خبریں

چترکوٹ میں ’نابالغ لڑکیوں کے جنسی استحصال‘ پراین سی پی سی آر نے ضلع انتظامیہ سے رپورٹ طلب کی

نئی دہلی،9جولائی(آئی این ایس انڈیا) نیشنل کمیشن فار پروٹیکشن آف چلڈرن رائٹس (این سی پی سی آر) نے جمعرات کو اترپردیش کے چتر کوٹ میں نابالغ لڑکیوں کے ساتھ جنسی استحصال کے الزامات پر ضلع انتظامیہ سے رپورٹ طلب کی ہے۔ساتھ ہی کمیشن نے انتظامیہ کو جلد از جلد اس معاملے میں ایف آئی آر درج کرنے کی ہدایت دی۔ این سی پی سی آر کی جانب سے جاری بیان کے مطابق کمیشن کے چیئرمین پریانک کانونگو نے ایک خبر پرنوٹس لیتے ہوئے ڈسٹرکٹ مجسٹریٹ (چترکوٹ) سے فون پر بات کرکے صورتحال کاجائزہ لیااور تمام لڑکیوں کی حفاظت کو یقینی بنانے کی ہدایت دی۔ بیان میں کہا گیا ہے کہ این سی پی سی آر نے ضلع مجسٹریٹ کو ایک خط لکھا ہے جس میں انہیں ہدایت دی گئی ہے کہ وہ اس معاملے کی سنجیدگی سے تحقیقات کریں اور جلد از جلد اس معاملے میں ایف آئی آر درج کریں۔

[ads4]

ضلع کے دیگر بارودی سرنگوں میں بھی بچوں کے حقوق پامال ہونے کے امکانی خطرے کے پیش نظر کمیشن نے ضلع انتظامیہ کو بھی ہدایت دی ہے کہ وہ ضلع کی تمام بارودی سرنگوں کی جانچ کرے اور سات دن میں کمیشن کو رپورٹ پیش کرے۔ کمیشن کو ایک خط لکھا گیا تھا جس میں ٹیم کو معائنہ کے لئے بھیجنے کی درخواست کی گئی تھی، جس کے بعد اسٹیٹ کمیشن نے تین رکنی ٹیم تشکیل دی ہے۔ ٹیم 10 جولائی کو معائنہ کے لئے موقع پر پہنچے گی اور اس کے بعد رپورٹ کرے گی۔ ایک نیوز چینل پر نشر ہونے والی اس خبر میں دعوی کیا گیا ہے کہ چترکوٹ میں سرنگوں میں کام کرنے پر مجبور غریب کنبوں کی نابالغ لڑکیوں کے ساتھ جنسی استحصال کیا جارہا ہے۔

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

متعلقہ خبریں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close