اہم خبریں

یدی یورپا’جبری ریٹائرمنٹ کلب‘کے نئے شکاروں میں شامل ، چہر ہ بدلنے سے بی جے پی کاجرم کم نہیں ہوگا، کانگریس کاطنز

نئی دہلی26جولائی (ہندوستان اردو ٹائمز) بی ایس یدی یورپپاکے نے کرناٹک کے وزیراعلیٰ کے عہدے سے استعفیٰ دینے کے بعد کانگریس نے پیر کو وزیر اعظم نریندر مودی پر شدید تنقید کی اور الزام لگایا ہے کہ جبری ریٹائرمنٹ کلب میں شامل یدیورپا وزیر اعظم مودی کے نئے شکارہیں۔پارٹی کے جنرل سکریٹری اور کرناٹک کے انچارج رندیپ سورجے والا نے بھی دعویٰ کیا کہ چہرہ تبدیل کرنا کرناٹک میں بی جے پی کے کرپٹ کردارکوتبدیل نہیں کرے گا۔

انہوں نے ٹویٹ کیا ہے کہ صرف چہرہ بدلنا بی جے پی کے کرپٹ کردار کو تبدیل نہیں کرنے والاہے۔ سچ تو یہ ہے کہ مودی جی عادت کے ساتھ بی جے پی کے سینئر رہنماؤں کی تذلیل کرتے ہیں اور انہیں تاریخ کے کوڑے دان میں ڈال دیتے ہیں۔سرجے والا نے دعویٰ کیا ہے کہ مودی جی کے پاس ایک ریکارڈ ہے کہ انہوں نے اڈوانی جی ، مرلی منوہر جوشی جی ، کیشو بھائی پٹیل جی ، شانتا کمار جی ، یشونت سنہا جی اور بہت سے دوسرے لوگوں کو ریٹائرمنٹ پر مجبور کیا۔

مودی کے متاثرین میں سمترا مہاجن ، سشما سوراج ، اوما بھارتی ، سی پی ٹھاکر ، اے کے پٹیل ، ہرین پنڈیا ، ہرین پاٹھک اور کلیان سنگھ شامل ہیں۔ ان میں سب سے حالیہ نام ہرش وردھن ، روی شنکر پرساد اور سشیل مودی ہیں۔یدی یورپپاکو مودی جی نے استعفیٰ دینے کا حکم دے کر ان کی تذلیل کی ہے۔ وہ مودی جی کا تازہ ترین شکارہیں اور جبری ریٹائرمنٹ کلب کے ممبر بن گئے ہیں۔ہم جانتے ہیں کہ اب بی جے پی کے ایم ایل اے نہیں ، دہلی کی مطلق العنانیت چیف منسٹر کا فیصلہ کرتی ہے۔بی ایس یدی یورپپا نے پیر کو کرناٹک کے وزیراعلیٰ کے عہدے سے استعفیٰ گورنر تھاورچند گہلوت کو پیش کیا۔

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

Leave a Reply

متعلقہ خبریں

Back to top button
Close
Close