اہم خبریں

وزیر اعظم کوویڈ۔19 کا انتظام کرنے میں ناکام رہے، وزیر صحت کو بلی کا بکرا بنا دیاگیا،اعدادوشمارچھپائے گئے،ایوان میں کانگریس کاحملہ

نئی دہلی20جولائی (ہندوستان اردو ٹائمز) مرکزپرکوویڈ 19 سے متعلق اعداد و شمار چھپانے کا الزام لگاتے ہوئے حزب اختلاف کے رہنماؤں نے منگل کو راجیہ سبھا میں دعویٰ کیاہے کہ حکومت وبائی امراض کے انتظام میں مکمل طور پر ناکام ہوئی ہے جبکہ حکمران جماعت نے کہا ہے کہ ملک معیشت کی مضبوط بنیاد اور بہت سے اقدامات کی وجہ سے ، ملک اس وبائی امراض کے دوران ڈٹ گیا۔

اپوزیشن لیڈر اور کانگریس کے سینئر ممبر ملکاارجن کھڑگے نے ملک میں بیماری کا انتظام ، ویکسی نیشن اور پالیسی پر عمل درآمد اور ممکنہ تیسری لہر کے پیش نظر چیلنجوں کے بارے میں ایوان زیریں میں مختصر المیعاد گفتگو کا آغاز کرتے ہوئے کہاہے کہ یہ توقع نہیں کی جارہی تھی کہ کوویڈ۔19 کے نتائج اتنے سنگین ہوں گے۔ انہوں نے کہاہے کہ لیکن ملک اس وبا کی دوسری لہر سے گزرا اور کہا جارہا ہے کہ ہم تیسری لہر کے منہ پر کھڑے ہیں۔ اس وبائی بیماری سے ہونے والے زخم کبھی نہیں بھر سکتے ہیں۔حکومت نے وبائی مرض سے نمٹنے میں ناکامی کا الزام لگاتے ہوئے کھڑگے نے کہاہے کہ وزیر اعظم مسائل کو حل کرنے میں ناکام رہے اور وزیر صحت کو بلی کا بکرا بنا دیا۔انہوں نے کہا ہے کہ مزدور ، ملازمت ، اسپتالوں میں بستر آکسیجن کی کمی ، لاک ڈاؤن اور معیشت کی تباہی۔

حکومت نے اس پر تشویش کا اظہار نہیں کیا۔ حکومت کے پاس اشتہارات ظاہر کرنے ، دلکش الفاظ بنانے اور بار باردہرانے کی عادت ہے۔انہوں نے حکومت پر جھوٹے اعداد و شمار جاری کرنے کا الزام عائد کیا۔ انہوں نے کہاہے کہ حکومت کا دعویٰ ہے کہ کوویڈ 19 کے وبا کی وجہ سے قریب چار لاکھ افراد ہلاک ہوئے تھے۔ کھڑگے نے پوچھا کہ کیا یہ ہمیشہ ایک معمہ رہے گا کہ کوویڈ کی وجہ سے کتنے افراد کی موت ہوئی؟

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

Leave a Reply

Back to top button
Close
Close