اہم خبریں

اپوزیشن لیڈر وں کی شردپوار کی رہائش گاہ پرمیٹنگ،جاویداختر،سنجے جھااورکے سی سنگھ کی بھی شرکت،جانیں میٹنگ میں کیا ہوا؟

نئی دہلی22جون(ہندوستان اردو ٹائمز) آٹھ پارٹیوں کے لیڈران نے منگل کودہلی میں این سی پی رہنما شرد پوار کی رہائش گاہ پر منعقدہ میٹنگ میں شرکت کی ہے۔اس میں ترنمول کانگریس ، این سی پی ، راشٹریہ لوک دل ، سی پی آئی ، سی پی ایم ، عام آدمی پارٹی ، سماج وادی پارٹی اور نیشنل کانفرنس شامل ہیں۔ اس کے علاوہ سابق ممبران پارلیمنٹ پون ورما اور جاوید اختر ، سنجے جھا اور سابق سفارتکار کے سی سنگھ نے بھی حصہ لیاہے۔اسے 2024 کے لوک سبھا انتخابات سے قبل بی جے پی اور وزیر اعظم نریندر مودی کے خلاف مشترکہ پلیٹ فارم بنانے کی کوشش سمجھا جارہا ہے۔ تاہم شرد پوار نے اس کو کسی تیسرے محاذ کی مشق سمجھنے سے انکار کیا ہے۔

پوارکے قریبی ذرائع نے بتایا کہ راشٹریہ منچ کے کنوینر یشونت سنہا نے این سی پی سپریموسے ایسی میٹنگ کا اہتمام کرنے کی درخواست کی تھی۔ اس پر اتفاق کرتے ہوئے ، تمام جماعتوں اور ان کے رہنماؤں کو راشٹریہ منچ کے تحت شمولیت کی دعوت دی گئی ہے۔ کہا جاتا ہے کہ شرد پوار یا این سی پی نے اجلاس میں شرکت کے لیے کسی بھی رہنما یا پارٹی کو مدعو نہیں کیا ہے۔شردپوارنے پچھلے چند ہفتوں میں دو بار انتخابی پالیسی سازپرشانت کشور سے ملاقات کی تھی ۔سی پی ایم رہنما نیلوتپال باسو نے بتایاہے کہ شرد پوار کے گھر اپوزیشن جماعتوں کے رہنماؤں کی ملاقات کو سیاسی پلیٹ فارم بنانے کی کوشش کے طور پر دیکھنا درست نہیں ہوگا۔جمہوری اداروں پر حملوں پر تبادلہ خیال کیا گیا ہے۔ یہ ہم خیال سیاسی جماعتوں کا اجلاس تھا۔

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

Leave a Reply

Back to top button
Close
Close